کراچی میں تمام نشستوں پر فوج کی نگرانی میں الیکشن کرائے جائیں : تحریک انصاف کی اے پی سی

کراچی (سٹاف رپورٹر) تحریک انصاف کے تحت اے پی سی میں شریک جماعتوں کے رہنماو¿ں نے مشترکہ اعلامیہ میں مطالبہ کیا ہے کہ کراچی کی تمام نشستوں پر فوج کی مکمل نگرانی میں دوبارہ انتخابات کرائے جائیں ،کراچی سے بھتہ خوری ،ٹارگٹ کلنگ اور دیگر جرائم کے خاتمے کیلئے ریاستی ادارے بھرپور کوششیں کریں اور مختلف سیاسی جماعتوں کے عسکری ونگز کو غیر مسلح کیا جائے اور ان ونگز میں موجود دہشت گردوں کو فوری گرفتار کیا جائے ۔ملک بھر میں فوری طور پر مردم شماری کرائی جائے اور نادرا کی نگرانی میں موجودہ ووٹر لسٹوں کو ازسرنو مرتب کیا جائے جبکہ انتخابی دھاندلی کرنے والے عناصر کے خلاف سپریم کورٹ فوری ایکشن لے ۔الیکشن کمشن انتخابی ٹریبونلز کی تعداد میں اضافہ کرے اور ان ٹریبونلز میں حاضر سروس ججوں کو شامل کیا جائے ۔حالیہ انتخابات میں جن حلقوں میں دھاندلی ہوئی ہے وہاں کاسٹ کئے گئے ووٹوں کی جانچ پڑتال کیلئے نادرا سے مدد لی جائے اور انگوٹھے کی تصدیق کا عمل فوری شروع کیا جائے اور اس کا آغاز کراچی سے کیا جائے۔ اے پی سی میں تحریک انصاف کے رہنماﺅں شاہ محمود قریشی ،نادر اکمل لغاری ،ڈاکٹر عارف علوی، پیپلزپارٹی کے تاج حیدر، مسلم لیگ (ن) نہال ہاشمی، جماعت اسلامی کے محمد حسین محنتی، (ق) لیگ کے حلیم عادل شیخ، سندھ یونائیٹڈ پارٹی کے سید جلال محمود شاہ ،سنی تحریک کے مطلوب اعوان، فنکشنل کے جام مدد علی، جمعیت علمائے اسلام (س) کے مفتی عثمان یار خان ،مہاجر قومی موومنٹ کے شمشاد قریشی، جے یو پی کے صاحبزادہ اویس نورانی ،نیشنل ورکرز پارٹی کے یوسف مستی خان ،مجلس وحدت مسلمین کے علامہ صادق رضا تقوی اور دیگر سیاسی ،قوم پرست اور مذہبی جماعتوں کے رہنماو¿ں نے شرکت کی۔ کانفرنس میں متحدہ اور اے این پی کو مدعو نہیں کیا گیا تھا۔ اس موقع پر خطاب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شفاف انتخابات ہم سب کی ضرورت ہیں ۔انہوں نے کہا کہ شفاف انتخابات کے بغیر ملک کے ادارے مضبوط نہیں ہوں گے اور نہ ہی ملک میں جمہوریت مستحکم ہوگی، کراچی میں امن و امان اور استحکام کے بغیر ملک کی خوشحالی ممکن نہیں۔
اے پی سی