کراچی: ایم کیو ایم کے 2 کارکنوں، مذہبی رہنما سمیت 6 افراد کی ٹارگٹ کلنگ

کراچی: ایم کیو ایم کے 2 کارکنوں، مذہبی رہنما سمیت 6 افراد کی ٹارگٹ کلنگ

کراچی (کرائم رپورٹر) کراچی کے مختلف علاقوں میں جمعہ کو تشدد اور فائرنگ کے واقعات میں مسجد کے پیش امام، متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنوں سمیت چھ افراد ہلاک اور ایک شخص زخمی ہوگیا۔ مسجد کے پیش امام مولانا محمد یاسر کو گلستان جوہر بلاک آٹھ میں موٹر سائیکل سواروں نے سفورا چورنگی کے نزدیک اس وقت فائرنگ کا نشانہ بنایا جب وہ جمعہ کی نماز پڑھانے کے بعد اپنے ساتھی محمد احمد کے ہمراہ موٹرسائیکل پر جارہے تھے۔ اہل سنت والجماعت کے ترجمان کے مطابق ہلاک ہونے والے پیش امام اور زخمی محمد احمد دونوں ان کے کارکن تھے۔ ادھر اورنگی ٹاﺅن کے سیکٹر 10 میں غوثیہ چوک پر موٹرسائیکل سوار افراد نے متحدہ قومی موومنٹ کے کارکنوں 45 سالہ محمد سلیم اور 32 سالہ سید علی حیدر زیدی کو فائرنگ کرکے ہلاک کردیا۔کورنگی روڈ پر اختر کالونی کے ٹریفک سگنل کے نزدیک مسلح افراد کی فائرنگ سے ایک نوجوان 25 سالہ سعید ولد طالب ہلاک ہوگیا جبکہ گلستان جوہر میں محکمہ موسمیات کے نزدیک جھاڑیوں سے 30 سالہ خاتون کی نعش ملی ہے جسے تشدد اور گلا گھونٹ کر ہلاک کیا گیا تھا تاہم فوری طور پر اس کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ اس کے علاوہ اتحاد ٹاﺅن میں بس سٹینڈ سے بھی ایک شخص کی تشدد زدہ لاش ملی ہے۔