کراچی کے 7 صوبائی حلقوں کے انتخابی نتائج الیکشن ٹربیونل میں چیلنج ‘ جماعت اسلامی کی درخواستیں منظور

کراچی کے 7 صوبائی حلقوں کے انتخابی نتائج الیکشن ٹربیونل میں چیلنج ‘ جماعت اسلامی کی درخواستیں منظور

کراچی(نیوز رپورٹر)جماعت اسلامی کے جانب سے کراچی کے صوبائی اسمبلیوں کے 7حلقوں کے انتخابات کالعدم قرار دینے اور کامیاب امیدواروں کے نوٹیفیکیشن منسوخ کر کے دوبارہ انتخابات کرانے کے لیے دائر درخواستوں پر الیکشن کمیشن کراچی کے پریزائیڈنگ آفیسر ظفر احمد خان شیروانی نے 29اکتوبر سے کاروائی شروع کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں اور 11مئی کے انتخابات میںکامیاب ہونے والے امیدواروں و دیگر کو نوٹس جاری کر دیئے ہیں تفصیلات کے مطابق حلقہ PS-119سے جماعت اسلامی کے امیدوار راشد منان نے متحدہ کے امیدوار ارتعزاز خلیل اللہ فاروقی کی کامیابی کو چیلنج کیا ہے جس کی سماعت 29اکتوبر کو ہوگی ۔ حلقہ PS-117سے جماعت اسلامی کے امیدوار انجینئرصابر احمد نے متحدہ کے کامیاب ہونے والے امیدوار ڈاکٹر صغیر احمد ، حلقہ PS-120سے جماعت اسلامی کے امیدوار ذوالفقار علی نے متحدہ کے کامیاب ہونے والے امیدوار نشاط ضیاءقادری اورحلقہ PS-127سے جماعت اسلامی کے امیدوارالطاف حسین پٹنی نے متحدہ کے امیدوار ایم اشفاق احمد منگی کی کامیابی کو چیلنج کیا ہے ان تینوں حلقوں کے کیس کی سماعت الیکشن ٹربیونل کراچی میں 30اکتوبر کوہوگی جبکہ حلقہ PS-116 سے جماعت اسلامی کے امیدوارنصر اللہ شجیع نے متحدہ کے کامیاب ہونے والے امیدوار محمود عبدالزاق ، حلقہ PS-118 سے جماعت اسلامی کے امیدوار سید قطب احمد نے متحدہ کے کامیاب امیدوار عدنان احمد اور حلقہ PS-126 سے جماعت اسلامی کے امیدوار محمد یونس بارائی نے متحدہ کے امیدوارسید فیصل علی سبزواری کی کامیابی کو چیلنج کیا ہے ان تینوں پٹیشنوں کی سماعت 31اکتوبر کو ہوگی۔