سٹاک مارکیٹ میں شدید مندا‘ 100 انڈیکس پوائنٹس اڑھائی ماہ کی کم ترین سطح پر بند

کراچی + لاہور (مارکیٹ رپورٹر+ کامرس رپورٹر) کراچی سٹاک ایکسچینج میں منگل کے روز عالمی سٹاک مارکیٹیں کریش ہونے پر شدید مندے پر کے ایس ای 100انڈیکس 258.97پوائنٹس کی کمی پر دونفسیاتی حدود سے گر کر اڑھائی ماہ کی 9428.44 کی انتہائی نچلی سطح پر آگیا جس سے سرمایہ کاری مالیت میں مزید 74ارب 19کروڑ روپے سے زائد کمی کے باعث کاروباری سرگرمی کریش کر گئی۔ تفصیلات کے مطابق عالمی سٹاک مارکیٹوں میں زبردست مندی‘ بجٹ میں سیلز ٹیکس کی جگہ پر ویلیو ایڈڈ ٹیکس (وی اے ٹی) کے نفاذ کی زبردست کنفیوژن‘ بعض کمپنیوں کے منافع میں توقع سے زائد کمی‘ خریداروں کی عدم دلچسپی اور سیاسی ومعاشی حالات میں ابتری پائے جانے کے باعث سرمایہ کاروں بالخصوص مقامی وغیر ملکی سرمایہ کاروں نے موجودہ حالات میں مایوسی کا مظاہرہ کرتے ہوئے حصص کی خریداری سے محتاط ہوکر بیشتر حصص اونے پونے داموں پر فروخت کر کے مارکیٹ سے فوری نکل جانے پر توجہ مرکوز کر دی۔ اس طرح دوسرے روز بھی حصص کی مجموعی مارکیٹ مالیت میں سرمایہ کاروں کے 74ارب 19کروڑ 22لاکھ 76ہزار ایک روپے مزید ڈوب گئے جس سے مجموعی سرمایہ کا ری مالیت مزید گھٹ کر 26کھرب 57ارب 49کروڑ 9لاکھ 25ہزار 778روپے رہ گئی۔ لاہور سٹاک ایکسچینج میں بھی گزشتہ روز مندے کا رجحان رہا۔ ایل ایس ای 25انڈکس میں 83.99پوائنٹس کی کمی ہوئی جو کہ مارکیٹ کے اختتام پر 2962.82 رہا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 107کمپنیوں کا کاروبار ہوا 7 کے حصص میں اضافہ 73 کے حصص میں کمی جبکہ 27 کے حصص میں استحکام رہا۔