کراچی کے امن کو پاکستان سے علیحدہ کر کے نہیں دیکھا جاسکتا: مولانا بخش چانڈیو

کراچی کے امن کو پاکستان سے علیحدہ کر کے نہیں دیکھا جاسکتا: مولانا بخش چانڈیو

کراچی (اے این این) مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ دہشت گردی پورے ملک کا مسئلہ ہے اور شہر کے امن کو پاکستان سے علیحدہ کر کے نہیں دیکھا جا سکتا۔کراچی میں نثار کھوڑو اور نفیسہ شاہ کے ہمراہ امجد فرید صابری کے اہل خانہ سے تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ امجد فرید صابری پورے پاکستان کی آواز تھے، وہ ایک فقیر شخص اور امن و محبت کے سفیر تھے، سمجھ نہیں آیا کہ انھوں نے دہشت گردوں کا کیا بگاڑا تھا، ان کی شہادت پر نا صرف پورے پاکستان میں غم کی لہر پائی جاتی ہے بلکہ دنیا کے کئی دیگر ممالک میں بھی ان کے چاہنے والے اشکبار ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کا کام ہی افراتفری پھیلانا ہوتا ہے اور وہ نشانہ ہی اس شخص کو بناتے ہیں جو محبت کا مرکز ہوتا ہے، حکومت اقدامات کر رہی ہے اور جلد قاتلوں تک پہنچ جائیں گے۔ مولا بخش چانڈیو کا کہنا تھا کہ کراچی کے امن کو پورے پاکستان کے امن سے علیحدہ کر کے نہیں دیکھا جا سکتا، جب پورے پاکستان میں دہشت گردوں کے خلاف گھیرا تنگ ہو رہا ہے تو وہ بھی بکھر گئے ہیں اور اپنی بقا کی جنگ لڑ رہے ہیں، اسی لئے ایسی شخصیات کو نشانہ بنا رہے ہیں جس سے عوام میں مایوسی کی لہر پیدا ہو۔ اس موقع پر نثار کھوڑو کا کہنا تھا کہ حکومت امجد فرید صابری کے بچوں کی تعلیم اور ذریعہ معاش کے لئے ہر لحاظ سے مدد کرے گی۔