کراچی میں مزید 11 افراد قتل، سکول پر دستی بم حملہ، 3 بچے زخمی

کراچی میں مزید 11 افراد قتل، سکول پر دستی بم حملہ، 3 بچے زخمی

کراچی (کرائم رپورٹر) کراچی میں جمعہ کو بھی مختلف علاقوں میں تشدد اور فائرنگ کے واقعات میں مزید 11 افراد قتل اور 7 زخمی ہو گئے، لیاری میں بھی کشیدگی برقرار اور کاروبار زندگی معطل رہا۔ بہار کالونی میں نامعلوم افراد نے ایک نوجوان کو اغوا کے بعد تشدد اور سر میں گولیاں مار کر ہلاک کر دیا۔ ادھر ماڑی پور میں نوجوان کی لاش ملی، سٹی ریلوے کالونی میں موٹر سائیکل سوار مسلح افراد نے دو افراد تاج منیر، موسیٰ کو فائرنگ کر کے ہلاک کیا۔ نیو کراچی کے علاقے لاسی گوٹھ میں نامعلوم افراد نے علی زمان کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا جبکہ نیو کراچی انڈسٹریل ایریا میں تولیہ فیکٹری سے ایک شخص کی ہاتھ پاﺅں بندھی تشدد زدہ لاش ملی۔ منگھو پیر کے علاقے پختون آباد میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے تین افراد جاںبحق ہو گئے۔ ملیر ملت گارڈن سے ایک لاش ملی ہے۔ پولیس کے مطابق لاش کے ساتھ دھماکہ خیز مواد بندھا ہوا تھا۔ منگھوپیر میں شدت پسند نے فائرنگ کی جس سے میر زمان جاںبحق ہو گیا جبکہ ہلاک ہونے والے شدت پسند کی شناخت صدیق اللہ محسود کے نام سے ہوئی۔ علاوہ ازیں اورنگی ٹا¶ن کے شاہ فیصل محلے میں گورنمنٹ پرائمری سکول پر دستی بم کے حملے میں 3 بچے زخمی ہوئے جبکہ دھماکے سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔