کراچی آپریشن: پولیس رپورٹ میں غلطیوں کی نشاندہی‘ دوبارہ پیش کی جائے: سپریم کورٹ

کراچی (این این آئی) سپریم کورٹ نے کراچی آپریشن سے متعلق پولیس رپورٹ میں غلطیوں کی نشاندہی کرتے ہوئے دوبارہ 10 روز میں رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ عدالت نے پولیس کو ہدایت کی کہ کراچی آپریشن کے دوران ملزمان کی گرفتاریوں اور آپریشن سے حاصل ہونے والے نتائج سے عدالت کو آج ہی آگاہ کیا جائے۔ اے آئی جی لیگل نے دو سالہ رپورٹ پیش کی۔ پولیس رپورٹ کے مطابق آپریشن کے بعد شہر میں قتل کی وارداتوں میں 29 فیصد ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں 62 فیصد‘ اغوا برائے تاوان میں 5 فیصد‘ بھتے کی واداتوں میں 8 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث 225 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے۔ 2013ء کے دوران دہشت گردی کی زد میں 169افراد جاں بحق ہوئے اور 2014میں اب تک 58افراد دہشت گردی کا نشانہ بن چکے ہیں ۔آپریشن کے دوران دہشت گردی میں ملوث 245ملزمان گرفتار ہوئے ہیں ۔ 242جیل میں ،5پولیس ریمانڈ جبکہ 2ملزمان کی ضمانتیں ہو چکی ہیں۔ پولیس رپورٹ کے مطابق کراچی آپریشن سے پہلے بھتہ خوری کی وارداتوں کے 1235 مقدمات درج ہوئے تھے جبکہ آپریشن کے دوران 1147مقدمات درج ہوئے ہیں ۔پولیس نے آپریشن کے دوران بھتہ خوری میں ملوث 183 مقدمات میں ملوث 321 ملزمان کو گرفتار کیا ہے۔ کراچی آپریشن کے بعد بھتہ خوری کے 6 ملزمان پولیس مقابلوں میں مارے گئے جبکہ آپریشن سے قبل ایسا کوئی واقعہ رونما نہیں ہوا۔ آپریشن میں قتل کے مقدمات میں 956 مفرور ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔ اغوا برائے تاوان کے 109 ملزمان گرفتار‘ اغوا برائے تاوان کے 9 ملزمان ہلاک ہو چکے ہیں۔ 938 ملزمان کو گرفتار کرکے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں میں پیش کیا گیا۔ کراچی میںانسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتیں 70 مجرموں سزائیں سنا چکی ہے۔ قتل کے 324 مقدمات میں 411 ملزمان کے چالان پیش ہو چکے ہیں۔ ٹارگٹ کلنگ کی 127وارداتوں میں ملوث 137،دھماکہ خیز مواد رکھنے میں ملوث 183مقدمات میں 71ملزمان کے خلاف چالان پیش ہوئے۔ اغوا برائے تاوان کے 72 مقدمات میں 105 ملزمان‘ بھتہ خوری کے 135 مقدمات میں 173 ملزمان‘ ڈکیتی کے 564 مقدمات میں 620 ملزمان‘ سٹریٹ کرائم کے 595 مقدمات میں 612 ملزمان‘ غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے 4956 مقدمات میں 4935 ملزمان‘ منشیات کے 2925 مقدمات میں 3429 ملزمان جبکہ دیگر جرائم کے 4381 مقدمات میں 6639 ملزمان کے خلاف عدالتوں میں چالان پیش ہو چکے ہیں۔ 128 پولیس اہلکاروں کو شہید کیا گیا ہے۔ جبکہ 2013ء میں شہر میں دہشت گردی کی وارداتوں میں 124 پولیس اہلکار شہید ہوئے تھے ۔پولیس اہلکاروں کے قتل میں ملوث 5 ملزمان کو سزا ہو چکی ہے جبکہ 104 ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے۔