ساجد قریشی کے قتل میں ملوث افراد کھلی دہشت گردی پر اتر آئے ‘ ارکان اسمبلی

ساجد قریشی کے قتل میں ملوث افراد کھلی دہشت گردی پر اتر آئے ‘ ارکان اسمبلی

کراچی(نیوز رپورٹر)متحدہ قومی موومنٹ کے حق پرست اراکین قومی اسمبلی نے کہا ہے کہ حق پرست رکن سندھ اسمبلی ساجد قریشی اور ان کے صاحبزادے وقاص قریشی کے سفاکانہ قتل میں ملوث دہشت گرد کھلی دہشت گردی پر اترے ہوئے ہیں جبکہ حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ادارے دہشت گردوں کو کیفر کردار تک پہچانے اور عوام اور ان کے منتخب نمائندوں کو تحفظ کی فراہمی میں بری طرح سے ناکام ہوچکے ہیں ۔اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ ایک جانب کالعدم تنظیموں کے دہشت گرد ایم کیوایم کے منتخب نمائندوں اور کارکنان کو فائرنگ کا نشانہ بنا کر بیدردی سے قتل کررہے ہیں تو دوسری جانب قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے بھی ایم کیوایم کے بے گناہ کارکنان کو گرفتار کرنے کے بعد انہیں تشدد کا نشانہ بنا کر ماورائے عدالت قتل کیا جارہا ہے اور اب تک ایم کیوایم کے 3کارکنان کو ماورائے عدالت قتل کیا جاچکا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہر ذی شعور شخص اس بات کا اندازہ ضرور لگا سکتا ہے کہ ایک منظم منصوبہ بندی اور گھناﺅنی سازش کے تحت ایم کیوایم کے منتخب نمائندوں اور کارکنان کا قتل عام کرایا جارہا ہے اور اس ضمن میں گینگ وار دہشت گرد وںاور جرائم پیشہ عناصر کو بھی کھلی سرپرستی فراہم کی جارہی ہے ۔حق پرست اراکین قومی اسمبلی نے صدر مملکت آصف علی زرداری ،و زیراعظم نواز شریف ، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار اور وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا کہ حق پرست رکن سندھ اسمبلی ساجد قریشی اور ان کے صاحبزادے وقاص قریشی کے سفاکانہ قتل میں ملوث دہشت گردوں کو فی الفور گرفتار کیاجائے اورایم کیوایم کے منتخب نمائندوں اور کارکنان اور عوام کی جان ومال کے تحفظ کیلئے فی الفور مثبت اقدامات بروئے لائے جائیں ۔