کراچی : اے این پی کا سندھ اسمبلی کے بائیکاٹ کا اعلان، وزیر کو کام سے روک دیا

کراچی (اے این این) سندھ حکومت کے رویے کیخلاف عوامی نیشنل پارٹی نے شدید احتجاج کرتے ہوئے صوبائی وزیر محنت امیر نواب خان کو کام کرنے سے روک دیا اور 24 ستمبر کو صوبائی اسمبلی کے اجلاس کے بائیکاٹ کا اعلان اور 17 اکتوبر کو ضمنی الیکشن فوج کی نگرانی میں کرانے کا مطالبہ کردیا۔ عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر شاہی سید نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ضمنی انتخابات ملتوی کرانے کے حوالے سے اعتماد میں نہیں لیا الیکشن کمشن کا فیصلہ سیاسی ہے۔ فیصلہ کیا ہے کہ صوبائی وزیر محنت تاحکم ثانی سرکاری امور سرانجام نہیں دیں گے اور اے این پی کے دونوں ارکان صوبائی اسمبلی 24 ستمبر کو ہونیوالے اجلاس میں شریک نہیں ہوں گے ہم اسمبلی اجلاس کا بائیکاٹ کرکے احتجاج ریکارڈ کرائیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت اگر غیر جانبدارانہ الیکشن کا انعقاد چاہتی ہے تو انتخابی عمل فوج کی نگرانی میں کرایا جائے۔