سپریم کورٹ نے سندھ حکومت کے غیرملکی فنڈنگ سے جاری منصوبوں کی تفصیلات طلب کرلی

کراچی(وقائع نگار) سپریم کورٹ نے محکمہ تعلیم اور محکمہ بہبود آبادی کے ملازمین کی مستقلی کے کیس کی سماعت کے دوران حکومت سندھ سے غیرملکی فنڈنگ سے جاری منصوبوں کی تفصیلات طلب کرلی اور چیف سیکرٹری سندھ سے سوال کیا کہ فارن فنڈنگ کیوں آرہی ہے ؟ کیا یہ قرضہ ہے یا مہربانی ہورہی ہے؟چیف سیکرٹری بتائیں کہ غیر ملکی فنڈنگ سے محکموں کے منصوبے کیوں چلائے جا رہے ہیں۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ محکموں کے باوجود الگ سے پراجیکٹ ڈائریکٹر بنا کر اسے اختیارات اور فنڈز دے دیئے جاتے ہیں اربوں روپے کی فارن فنڈنگ سے کوئی فرق نہیںپڑا محکموں کے ہوتے ہوئے متوازی حکومت کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر حکومت سندھ کو غیر ملکی امداد سے چلائے جانے والے منصوبوں کی تفصیلات جمع کرانے ہدایت کردی۔
سپریم کورٹ/ تفصیلات طلب