وزیراعظم کا فوج بیرون ملک نہ بھیجنے کا فیصلہ خوش آئند ہے: الطاف

وزیراعظم کا فوج بیرون ملک نہ بھیجنے کا فیصلہ خوش آئند ہے: الطاف

لندن (اے پی اے+آن لائن) متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے واضح اور دوٹوک الفاظ میں اعلان کر کے واضح کردیا کہ پاکستانی افواج شام، بحرین سمیت کسی ممالک نہ بھیجنے سے متعلق پاکستانی قوم میں پائی جانیوالی بے چینی، ذہنی پریشانی اور بے یقینی کی کیفیت کا خاتمہ کردیا ہے، وزیراعظم ڈاکٹر نواز شریف نے پاکستان ائرفورس بیس میانوالی کو قومی ہیرو ایم ایم عالم بیس کا نام دینے کی تقریب سے جو خطاب کیا ہے اس کا مجھ سمیت پوری پاکستانی قوم تہہ دل سے خیرمقدم کرتی ہے۔ ایک بیان میں الطاف حسین نے کہاکہ اس وقت پاکستان سمیت جو جو ممالک مسائل کا شکار ہیں ان تمام ممالک کو ایک ایسی باوقار اور نڈر لیڈر شپ کی ضرورت ہے جو ان ممالک کے عوام کے خدشات اور ذہنی پریشانیوں کا واضح اور دو ٹوک الفاظ میں اظہار کرے تاکہ قوم کے افراد کی تسلی و تشفی ہوسکے۔ وزیراعظم نے واضح اور دوٹوک الفاظ میں یہ اعلان کرکے پاکستانی قوم میں پائی جانے والی بے چینی، ذہنی پریشانی اور بے یقینی کی کیفیت کا خاتمہ کردیا ہے۔ الطاف حسین نے کہا میں دعا گو ہوں کہ اللہ تعالیٰ، وزیراعظم میاں نوازشریف کو مستقبل میں بھی اسی طرح قوم کے مفاد میں جرات مندانہ فیصلے کرنے اور عوام میں ان کا اظہار کرنے کا حوصلہ اور توفیق عطا کرے۔ مزید برآں آن لائن کے مطابق الطاف حسین نے کہا ہے میں نے غیر آئینی، غیر قانونی بات نہیں کی، میری تقریر ریکارڈ پر موجود ہے غورسے سنا جائے تو ہر فرد اس نتیجہ پر پہنچے گاکہ میں نے کوئی غلط بات نہیں کہی۔ میں نے واضح الفاظ میں یہ کہا ہے اگر حکومت اداروں یا حکام کو ایسا حکم دے جوآئین، قانون، تہذیب اور ملک کے مفادکے خلاف ہو تو اداروں کے حکام کو ایسے احکامات نہیں ماننے چاہئیں اور ماضی میں متعدد بار ایسا ہو چکا ہے جس کی مثالیں موجود ہیں۔ وہ نائن زیروپر اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔