جیل میں دم توڑنے والے سنی تحاد کونسل کے رہنما طارق محبوب سپردخاک سندھ حکومت نے تحقیقاتی کمیٹی بنا دیا

  جیل میں دم توڑنے والے سنی تحاد کونسل کے رہنما طارق محبوب سپردخاک  سندھ حکومت نے تحقیقاتی کمیٹی بنا دیا

کراچی (نیوز رپورٹر)  کراچی  جیل میں  حراست میں ہلاک ہونیوالے سنی اتحاد کونسل کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری طارق محبوب صدیقی شہید کو سخی حسن قبرستان میں انکی والدہ کے قدموں میں دفن کردیا گیا۔ نماز جنازہ مفتی منیب الرحمن نے پڑھائی جس میں صاحبزادہ حامد رضا خان، ثروت اعجاز قادری، شاہد غوری، حاجی محمد حنیف طیب اور ایم کیو ایم کے وفد نے بھی شرکت کی۔  دوسری جانب سندھ حکومت کی جانب سے طارق محبوب کے دوبارہ پوسٹمارٹم اور ایف آئی آر  درج کرنے کے وعدے جوکہ کمشنر کراچی اور پولیس چیف نے دھرنا ختم کرانے کیلئے کئے تھے وہ پورے نہ ہوسکے۔ مفتی اعظم پاکستان مفتی منیب الرحمن‘ سنی اتحاد کونسل کے سربراہ صاحبزادہ حامد رضا اور دیگر اہلسنت علماء و مشائخ نے اعلان کیا ہے کہ طارق محبوب کی شہادت رائیگاں نہیں جائیگی۔ سندھ حکومت کی جانب سے وعدہ خلافی اور عدم تعاون کے بعد اب یہ معاملہ وفاقی حکومت کے سامنے رکھا جائیگا‘ اگر وفاقی حکومت نے بھی انصاف کی فراہمی میں کوتاہی کی تو ملکی سطح پر عوام اہلسنت احتجاجی لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ نے رات گئے معاہدہ کیا تھا کہ صبح ری پوسٹ مارٹم کرایا جائے گا۔ مگر پیر کو تمام دن عدالتوں میں دھکے کھانے کے باوجود دوبارہ پوسٹ مارٹم کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ ایف آئی آر کے اندراج کے وعدے بھی پورے نہیں ہوئے۔ صاحبزادہ حامد رضا نے کہا کہ طارق محبوب کی تشدد زدہ خون سے لت پت نعش کی تصویریں اور دل ہلادینے والی وڈیو کلپس لیکر آج ہی اسلام آباد روانہ ہورہا ہوں جہاں انصاف کیلئے ہر سطح پر رابطے کئے جائیں گے۔  حکومت سندھ نے انجمن نوجوانان اسلام کے صدر طارق محبوب کی موت کی تحقیقات کے لئے کمیٹی قائم کر دیں کمیٹی کا سربراہ ڈی آئی جی ایسٹ کراچی منیر احمد شیخ کو مقرر کیا گیا ہے۔ کمیٹی کو ایک ہفتے کے اندر تحقیقاتی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی  ہے۔