کپاس کی پیداوار میں 6لاکھ67ہزار گانٹھو ں12.03فیصد اضافہ

کراچی(مارکیٹ رپورٹر) پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن نے 15اکتوبر تک کپاس کے پیداواری اعدادوشمار جاری کئے ہیں جس کے مطابق اس عرصے کے دوران 52لاکھ 83ہزار گانٹھوں کی پیداوار رہی جوگزشتہ سال اس مدت کی پیداوار 47لاکھ 15ہزار757گانٹھوں کے نسبت 5لاکھ 67ہزار445 گانٹھیں 12.03فیصد زائد ہے سندھ میں 22لاکھ 30ہزار 90 ہزار گانٹھوں کی پیداوار رہی جو گزشتہ سال اس مدت میں پیداوار 13لاکھ 65ہزار453 گانٹھوں کی نسبت 18لاکھ 85ہزار447گانٹھیں63.38فیصد زائد ہے پنجاب میں 30لاکھ 52ہزار گانٹھوں کی پیداوار ہوئی جوگزشتہ سال اسی مدت میں پیداوار33لاکھ 50ہزار299گانٹھوں کے نسبت 2لاکھ 98ہزار8.89فیصد کم ہے کاٹن بروکرز نے کپاس کی پیداواری رپورٹ پرتبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کپاس کی پیداوار کے بارے میں متضاد رائے دی جارہی ہے پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین مہیش کمار نے کہا کہ پیداوار ایک کروڑ 45لاکھ گانٹھیں ہونے کی توقع ہے اس کے علاوہ دیگر ذرائع نے پیداوار ایک کروڑ 30تا 35 لاکھ گانٹھیں ہونے کا عندیہ دے رہے ہیں ان کے مطابق بارشوں اورسیلاب سے فصل کو نقصان ہوا ہے اس سے قبل پیداوار ایک کروڑ 50لاکھ گانٹھیں ہونے کی توقع کی جارہی ہے۔