ہڑتال ختم ہونے سے ہزاروں کنٹینرز کی اندرون ملک ترسیل شروع، ٹریفک جام

 کراچی + اسلام آباد (نوائے وقت رپورٹ + ایجنسیاں) گڈز ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال ختم ہونے کے بعد بندر گاہ پر پھنسے ہوئے ہزاروں کنٹینرز کی اندرون ملک ترسیل شروع ہونے پر بندرگاہ کے اطراف کی سڑکوں پر بدترین ٹریفک جام ہو گیا ہے۔ جب کہ ایف بی آر نے گڈز اور مسافر ٹرانسپورٹروں کیلئے ٹیکس کی شرح میں کمی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے اور ٹرانسپورٹروں کیلئے ٹیکس کی شرح کم کرکے 28 روپے کر دی گئی ہے۔  گڈز ٹرانسپورٹرز گیارہ روز بعد ہڑتال ختم ہونے کے بعد بڑی تعداد میں مال بردار ٹرک بندر گاہ سے باہر نکلے تو کیماڑی، ٹاور، ماڑی پور روڈ اور اطراف کی سڑکوں پر بدترین ٹریفک جام ہو گیا اور سینکڑوں گاڑیاں پھنس گئیں جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہوا۔ بندرگاہ کے اطراف کے دفاتر جانے والے بروقت نہیں پہنچ پائے۔ ہفتے کا پہلا ورکنگ ڈے ہونے کے باعث سڑکوں پر ویسے ٹریفک زیادہ تھا ایسے میں ہزاروں کنٹینرز کی اندرون ملک ترسیل شروع ہونے سے مزید ٹریفک جام ہو گیا۔ علاوہ ازیں صدر آل پاکستان ٹرانسپورٹرز اسلم نیازی نے بتایا کہ حکومت نے مطالبات منظور کر لئے ہیں ٹرک اور ٹرالر پر ایک روپیہ فی کلو ٹیکس کم کر دیا گیا اس حوالے سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق ٹرک اور ٹرالر پر ٹیکس تین سے کم کرکے دو روپے فی کلو کر دیا گیا۔