کراچی میں فائرنگ، تاجر، اسکا ڈرائیور، نوجوان ہلاک، 10دہشت گرد گرفتار

کراچی (آن لائن+نوائے وقت نیوز) کراچی میں موٹرسائیکل سواروں کی کار پر فائرنگ‘ دو افراد جاں بحق‘ ایک ملزم گرفتار‘ ایک فرار ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز صبح ساڑھے آٹھ بجے کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری تھانہ کے قریب دو موٹرسائیکل سواروں نے کار پر فائرنگ کی جس کے نتیجے اسماعیلی فرقے کے تاجر کریم آغا خان اور ان کا ڈرائیور حقنواز موقع پر جاں بحق ہوگیا۔ پولیس کے مطابق فائرنگ کے وقت پولیس جائے وقوعہ کے قریب موجود تھی اسلئے موقع پر پہنچ گئی اور ایک ملزم ہاشم کو اسلحہ سمیت گرفتار کرلیا دوسرا فرار ہو گیا۔ ایس پی گلبرگ کے مطابق گرفتار ملزم چارسدہ کا رہائشی ہے اور وہ کل ہی کراچی آیا تھا اور اسے بزنس مین کریم آغا خان جس کا نارتھ ناظم آباد میں سپر سٹور ہے کو قتل کرنے کا ٹارگٹ ملا تھا۔ ایس پی گلبرگ نے میڈیا کو بتایا کہ ملزم کراچی کے کسی مدرسے میں تعلیم جاری رکھنے کا بتارہا ہے تاہم ابھی تک قتل کے ماسٹر مائنڈ کا نام معلوم نہیں ہوسکا۔ اس کی تلاش شروع کردی گئی۔ ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی نے حیدری مارکیٹ کے قریب تاجر اور ڈرائیور کے قتل کی مذمت کی ہے۔ دریں اثنا رشید شاہ میں پولیس نے کارروائی کرکے 2 ڈاکو پولیس اہلکاروں عامر اور ذیشان کو گرفتار کر لیا جو پاک کالونی تھانے میں تعینات ہیں اور ایک رکشہ ڈرائیور کو ملا کر لوگوں کو لوٹتے تھے۔ دوسری طرف رینجرز نے اتحاد ٹائون اور بہار کالونی میں سرچ آپریشن کرکے 10 دہشت گرد گرفتار اور اسلحہ برآمد کر لیا۔ شاہ فیصل کالونی میں رات گئے موٹر سائیکل سواروں نے 27 سالہ طلعت کو گولیاں مار کر ہلاک کر دیا، مقتول اہلسنت والجماعت سے تھا۔