خصوصی عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات کو جلد نمٹانے کا فیصلہ

خصوصی عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات کو جلد نمٹانے کا فیصلہ

کراچی (وقائع نگار) چیف جسٹس آف پاکستان کی ہدایت پر انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں کے ایڈمنسٹریٹو جج جسٹس انور ظہیر جمالی کی صدارت میں اہم اجلاس ہفتہ کو سپریم کورٹ آف پاکستان کراچی رجسٹری میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں سندھ کی تمام انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کے ججز، سیکرٹری داخلہ، سیکرٹری خزانہ، آئی جی سندھ اور دیگر حکام نے شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں میں زیرسماعت مقدمات کو جلد سے جلد نمٹایا جائے گا۔ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں کے انچارج جج اور ہر زون کے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن پر مشتمل کمیٹیاں ہر عدالت سے سنگین نوعیت کے پانچ پانچ مقدمات کو الگ کرے گی اور ان مقدمات کی سماعت پانچ دن میں مکمل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اجلاس میں پولیس کو پابند کیا گیا وہ سنگین مقدمات میں گواہوں کی عدالت میں بروقت حاضری یقینی بنائے گی جبکہ آئی جی سندھ کو حکم دیا گیا ہے انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالتوں کے ججز کو فول پروف سکیورٹی فراہم کی جائے جبکہ عدالتوں کے داخلی اور خارجی راستوں پر بھی سکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے جائیں گے۔ عدالتوں میں واک تھرو گیٹس کی تنصیب اور غیر متعلقہ افراد کی آمدورفت پر پابندی کو بھی یقینی بنایا جائے گا۔