کراچی : پی ایس 94 میں ضمنی الیکشن آج ہوگا‘ اے این پی کا بائیکاٹ

کراچی (نمائندہ نوائے وقت+مانیٹرنگ نیوز + نیٹ نیوز + اے این این) سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 94 کے ضمنی انتخابات آج (اتوار کو) ہونگے جبکہ اے این پی نے بائیکاٹ کر دیا ہے‘ صدر اے این پی شاہی سید نے کہا رینجرزکو مکمل اختیار نہیں دیا گیا،صوبائی حکومت تعاون نہیں کر رہی،آج یوم سیاہ منائیں گے دوسری طرف موٹر سائیکل ڈبل سواری پر پابندی اٹھا لی گئی لیکن اطلاق پیر سے ہو گا۔ 64 پولنگ سٹیشن حساس‘ 22 انتہائی حساس قرار دے دئیے گئے‘کسی کو اسلحہ لیکر چلنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ پولنگ سٹیشنز کے باہر رینجرز اہلکار بھی تعینات ہونگے کسی کو اسلحہ لیکر چلنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ اس حلقے میں ایم کیو ایم کے سیف الدین خالد، عوامی نیشنل پارٹی کے ریاض گل اور آزاد امیدواران زینت یاسمین، عبد الحق اور مسعود عالم کے درمیان مقابلہ ہو گا۔ یہ نشست ایم کیو ایم کے رکن رضا حیدر کے قتل کے بعد خالی ہوئی تھی۔ دریں اثناءکمانڈر سچل رینجرز بریگیڈئر وسیم ایوب نے کہا ہے کہ انٹیلی جنس رپورٹس کے مطابق کسی پولنگ سٹیشن میں خودکش دھماکہ یا فائرنگ کا واقعہ رونما ہو سکتا ہے‘ مشیر وزیر اعلیٰ سندھ شرمیلا فاروق نے کہا کہ کل کے الیکشن بہت حساس ہیں اور ان کے لئے سکیورٹی پلان ترتیب دیا گیا ہے۔ حساس پولنگ سٹیشنز پر زیادہ اہلکار تعینات کئے گئے ہیں اور فلیگ مارچ بھی کیا جائے گا۔ علاوہ ازیں وزیر داخلہ سندھ ذوالفقار مرزا نے کہا کہ 2010ءمیں ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں ملوث 34 اور خودکش حملہ کی منصوبہ بندی کرنے والے 200 سے زائد دہشت گرد گرفتار کئے گئے ہیں۔ایم کیو ایم سینئر موسٹ اتحادی ہیں اور ٹارگٹ کلنگ روکنا سب کی ذمہ داری ہے‘پو لیس کی نا اہلی سے بھی ٹارگٹ کلنگ ہو رہی ہے ۔ نمائندہ نوائے وقت کے مطابق فوج کو طلب کر لیا گیا، رینجرز کو شرپسندوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں۔ حلقہ 94پی ایس میں دفعہ 144نافذ کر دی گئی۔