ججوں کی جانب سے اداروں سے متعلق ریمارکس لمحہ فکریہ ہے‘ضیاءعباس

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سینئر سیاستدان اورمسلم لیگ کے سابق سیکرٹری جنرل سید ضیاءعباس نے کہا ہے کہ پانامہ لیکس کے حتمی فیصلے سے قبل عدالتی کارروائی کو سڑکوں پر زیر بحث لانا کسی بھی طر ح مناسب نہیں‘ ثبوتوں اور شواہد کی روشنی میں ملک کی اعلیٰ عدلیہ جو فیصلہ کرے اسے سب کے لئے قابل قبول ہونا چاہئے۔ اداروں کے تشخص کوبہتر بنائے بغیر صحت مند معاشرے کا قیام ممکن ہے نہ ہی معاشرے میں ایماندارانہ اور دیانتدارانہ سوچ کو پروان چڑھایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پانامہ کے الزامات کا تعلق ملک کی کسی اپوزیشن جماعت سے نہیں بلکہ یہ انکشافات صحافیوں کے ایک بین الاقوامی فورم نے کئے ہیں‘ اب جب معاملہ سپریم کورٹ میں ہے تو 20 کروڑ عوام دودھ کا دودھ اورپانی کاپانی ہوتے دیکھنے کے منتظر ہیں‘ فیصلہ بھی جلد ہونا چاہئے تاکہ بے یقینی کے بادل چھٹ سکیں۔
ضیاءعباس