سنی تحریک کے علماء بورڈ نے فوجی آپریشن کو جہاد قرار دیدیا

کر اچی(نیوز رپورٹر)سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری کے ابتبصارپر دہشتگردی کے خلاف پاکستان سنی تحریک علماءبورڈکے100جیدعلماءومفتیان کرام نے دہشتگردوں کے خلاف جاری فوجی آپریشن ” ضربِ عضب‘ کی حمایت اور دہشت گردی کے خلاف اجتماعی اعلامیہ جاری کردیا۔صوبائی آفس داتا دربار سے جاری کردہ سُنی تحریک علماءبورڈکے اجتماعی اعلامیہ میں کہا گیا کہ افواج پاکستان کااسلامی ریاست کے باغی دہشتگردوںکیخلاف شروع کیاگیاآپریشن” ضربِ عضب“ عین جہادہے اور اس کی تائید و حمایت قوم پرشرعاََ فرض ہے۔جو کوئی اس جہاد کی مخالفت کرے گاوہ شریعت کی رُوسے باغی گرداناجائے گااورریاست اس سے متعلق باغیوں جیسا سلوک کرنے کا حق رکھتی ہے۔اجتماعی شرعی اعلامیہ جاری کرتے ہوئے علماءنے کہا پنجاب اسمبلی چوک لاہور، پشاور ،مہمند ایجنسی، اور کوئٹہ میں ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کرتے ہیں ۔ پاکستان سنی تحریک کے زیر اہتمام آج جمعة المبارک کے خطبات دہشت گردی کے خلاف پڑھائے جائیں گے اور دہشت گردی کے خلاف قراردادیں مذمت منظور کی جائے گی ، اعلامیہ جاری کرنے والوں میں علامہ مجاہدعبدالرسول خان،علامہ شریف الدین قذافی ، پیر سید شاہ محمد ہمدانی ، مفتی محمد سلیم نقشبندی ، علامہ محمد ریاض ہزارو ی ، علامہ مفتی حسیب سبحانی ، علامہ شفاقت علی ہمدمی ، علامہ غلام محی الدین جلالی ، علامہ قاری عنصر سلطانی ، پیر سیف اللہ نقشبندی، علامہ قاری وارث علی سلطانی ، علامہ نوید اصغر ، علامہ سرفراز سیالوی، علامہ محمد رضوان قادری، و یگر بھی موجود تھے ۔
جہاد