چین کے تعاون سے ایٹمی بجلی گھر 6 برس میں مکمل ہو گا: چیئرمین اٹامک انرجی

کراچی (نوائے وقت رپورٹ+ اے پی پی) چیئرمین اٹامک انرجی انصر پرویز نے کہا ہے کہ ایٹمی بجلی گھر کا منصوبہ 6 سال میں مکمل ہو گا۔ منصوبہ چین کے تعاون سے مکمل کیا جائے گا۔ کے ٹو اور تھری منصوبے سے 2200 میگاواٹ بجلی پیدا ہو گی۔ منصوبے سے روزگار کے مواقع بھی پیدا ہونگے۔ انصر پرویز نے کہا کہ کینپ پاور پلانٹ گذشتہ 40 سال سے کام کر رہا ہے لیکن اس سے کوئی تابکاری نہیں ہوئی اور نہ ہی کراچی کی آبادی کو اس سے نقصان ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم بڑی منصوبہ بندی اور جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے یہ منصوبے شروع کر رہے ہیں، یہ منصوبے پاکستان کے انرجی بحران کو ختم کرنے میں مددگار ثابت ہوں گے۔ اس موقع پر ڈاکٹر انعام الرحمان نے کہا کہ پاکستان میں آبادی میں بڑی تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور اسی طرح ہماری توانائی کی ضروریات بھی بڑھ رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ہماری ساری کوششیں توانائی بحران پر قابو پانے کے لئے لگی ہوئی ہیں۔