کے ای ایس سی کو 650 میگاواٹ بجلی کی کٹوتی کا بیان من گھڑت ہے،شاہی سید

کے ای ایس سی کو 650 میگاواٹ بجلی کی کٹوتی کا بیان من گھڑت ہے،شاہی سید

کراچی (اسٹاف رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر اور پختون ایکشن کمیٹی( لوئرجرگہ) کے چیئرمین سینیٹر شاہی سیدنے کہا ہے کہ سینیٹر زاہد خان کے حوالے سے کے ای ایس سی کو نیشنل گرڈ سے 650 میگا واٹ بجلی کی فراہمی روکنے کا بیان من گھڑت ہے۔ صرف کے ای ایس سی کو نہیں بلکہ پاکستان کی باقی پاور کمپنیوں کو بھی پرائیویٹائز کیوں نہیں کیا جاتا۔ کے ای ایس سی میں غریب محنت کشوں کو بیروزگار کرکے سیاسی لوگوں کو لاکھوں روپے تنخواہ دے کر سیاسی رشوت سے نوازا گیا اور سیاسی بھرتیاں کی گئیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو اپنی رہائش گاہ مردان ہاﺅس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پرعوامی نیشنل پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری بشیر جان ،امان اللہ محسود اور نور اللہ اچکزئی بھی موجود تھے۔سینیٹر شاہی سید نے کہا کہ سینیٹ کی اسٹینڈنگ کمیٹی برائے پانی وبجلی کے چیئرمین سینیٹر زاہد خان کے حوالے سے کے ای ایس سی کو نیشنل گرڈ سے 650 میگا واٹ بجلی کی فراہمی روکنے کا بیان من گھڑت ہے۔ صرف کے ای ایس سی کو ہی کیوں پرائیوٹائز کیا گیا،پاکستان کی باقی کمپنیوں کو کیوں نہیں؟ کے ای ایس سی کے غریب محنت کشوں کو بے روزگار کرکے سیاسی لوگوں کولاکھوںروپے تنخواہ دے کرسیاسی رشوت سے نوازنااور سیاسی بھرتیاں کیوں کی گئی؟ انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان ، وزیراعظم پاکستان اور وفاقی وزیر برائے پانی و بجلی سے اپیل کی کہ وہ کے ای ایس سی کی نجکاری کے سلسلے میں کئے گئے دو نوں معاہدوں کا فوری نوٹس لیں اور نجکاری کے نام پر ملک و قوم کی لوٹی گئی دولت کو واپس دلوائیں اور قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کوسخت ترین سزا دیں۔