ولی بابر قتل کیس میں گرفتار مجرم فیصل موٹا نے سزا کو چیلنج کردیا

 ولی بابر قتل کیس میں گرفتار مجرم فیصل موٹا نے سزا کو چیلنج کردیا

کراچی(وقائع نگار)ولی بابر قتل کیس میں انسداد دہشت گردی کی عدالت سے مجرم قرار دیئے جانے والے فیصل محمود عرف فیصل موٹا نے اپنی سزا کو سندھ ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا ہے۔ فیصل موٹا نے اپنی درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ سزا سناتے وقت قواعد کو نظر انداز کیا گیا، سزائے موت میری غیر موجودگی میں سنائی گئی لہٰذا صفائی کا موقع دیا جائے۔ فیصل محمود کو 11 مارچ کو رینجرز نے ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو سے گرفتار کیا تھا۔شکار پور کی انسدادِ دہشت گردی عدالت نے اشتہاری ملزم کامران عرف ذیشان اور فیصل موٹا کو سزائے موت سنائی تھی۔یاد رہے کہ کیس سے منسلک پولیس اہلکاروں سمیت چھ افراد کو بھی قتل کیا جا چکا ہے۔اس سے قبل محکمہ داخلہ سندھ کی درخواست پر سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس نے اس اہم کیس کو کندھ کوٹ اور کشمور کی مشترکہ انسدادِ دہشت گردی کی عدالت منتقل کردیا تھا۔ نجی ٹی وی چینل کے رپورٹر ولی بابر کو 13 جنوری 2011 کو کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں فائرنگ کرکے قتل کیا گیا تھا۔