کراچی سے کم عمر لڑکیوں کی متحدہ عرب امارات سمگلنگ کا انکشاف

کراچی (خصوصی رپورٹ) کراچی میں ایسے انسانی سمگلروں کی موجودگی کا انکشاف ہوا ہے جس کے کارندے پسماندہ گھروں کی کم عمر لڑکیوں کو ملازمت کے بہانے متحدہ عرب امارات کی ریاستوں میں لے جاتے ہیں اور وہاں بھاری رقوم کے عوض عیاش لوگوں کے سپرد کر دیا جاتا ہے۔ روزنامہ امت نے ذرائع کے حوالے سے رپورٹ میں کہا ہے کہ ملک بدری کی صورت میں شہر میں قحبہ گری پر مجبور کیا جاتا ہے۔ 19 سالہ شازیہ کا کہنا ہے کہ اسے نوکری دلوانے کا کہہ کر دبئی بھیجا گیا۔ جہاں کئی لوگوں نے مجھے خریدا جبکہ اس حوالے سے ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ اہم ملزم پکڑ لیا ہے جس سے سنسنی خیز انکشافات کی توقع ہے۔