واٹر بورڈ کراچی کی ترقی میں رکاوٹ ہے: وسیم اختر

کراچی( خبر نگار) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ واٹربورڈ کراچی کی ترقی میں رکاوٹ ہے۔ دنیا بھرمیں کثیر المنزلہ عمارت بن رہی ہیں ۔ پابندی سے عوام براہ راست متاثر ہورہے ہیں وہ آباد کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر آباد کے چیئرمین عارف جیوا نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ آباد کے ساتھ مل کر صورتحال کا قانونی حل نکالیں ۔ انہوں نے سوال کیاکہ پانی نہیں ہے تو کیا اسپتال بنانا بند کردیں۔ میئر نے دریافت کیا کہ پانی کی قلت ہے تو ٹینکر مافیا پانی کہاں سے حاصل کررہی ہے۔ واٹر بورڈ کے کام میں رکاوٹ ڈالنا نہیں پانی فراہم کرنا ہے۔ تعمیراتی صنعت اربوں روپے کا ٹیکس دیتی ہے ہمارے پِاس 13 اسپتال ہیں لیکن چلانے کیلئے پیسے نہیں ہیں۔ آباد چاہے تو ان اسپتالوں کا کنٹرول سنبھالے اس سے قبل عارف جیوا نے کہاکہ امن کی واپسی کے ساتھ تعمیراتی شعبے میں سرمایہ کاری ہورہی ہے۔ کراچی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہے بلند عمارتیں پوری دنیا میں بن رہی ہیں۔ نئی عمارتوں پر پابندی برقرار رہی تو لاکھوں لوگ بے روزگار ہوجائیں گے۔ پابندی سے 308 تعمیراتی منصوبے متاثر ہوئے اور 600 ارب روپے کی سرمایہ کاری متاثر ہوئی۔