شہید امیر حسین شیرازی عالم با عمل اور پیکر صبر و رضا تھے ‘ عبدالقادر شیرازی

کراچی ( پ ر) سالانہ شہید ناموس رسالت علامہ پیر سید امیر حسین شاہ شیرازی رحمتہ اللہ علیہ کا17واں سالانہ جلسہ دستار فضلیت دار لعلوم و دربار عالیہ غوثیہ امیر یہ شیر از یہ گلشن عسکری قذافی ٹائون قائد آباد میں سجادہ نشین دربار عالیہ میں پیر سید عبدالقادر حسین شاہ شیرازی کی زیر صدارت ہوا ‘ عرس سے مفتی احمد میاں برکاتی ‘( حیدرآباد ) علامہ شفیق چشتی بورے والے ‘ علامہ شاہد رضوی ‘ سرگودھا ‘پیر فاروق انور شاہ کاظمی ‘ پیر سید سلطان علی شاہ چشتی ‘ مفتی احمد علی شاہ سیفی ‘ مفتی عبدالعلیم قادری ‘ پیر امان اللہ سہروردی ‘سکھر ‘ علامہ عبدالحفیظ معارفی ‘ مولانا اکرم سعیدی ‘ علامہ عبدالوہاب اکرم قادری ‘ صاحبزادہ سید عبدالقدیر شیرازی ‘ صاحبز ادہ سید عبدالحفیظ شیرازی ‘ صاحبزادہ سید مظہر حسین شیرازی و دیگر مقررین نے کیا اور صاحب عرس کو خراج عقیدت پیش کیا اور ان کی علمی‘ دینی ‘ ملی ‘ روحانی اور سماجی خدمات پر روشنی ڈالی اور کہا کہ علامہ پیر شیرازی شہید سرکار صبر و رضا کے پیکر ‘ عالم باعمل اور ولی کامل تھے ۔