ڈاکٹر عافیہ سے علیحدگی ہو چکی‘ بچوں کو حوالے کیا جائے: امجد خان

کراچی ( نامہ نگار) امریکہ میں زیر حراست ڈاکٹر عافیہ صدیقی کے بچوں کے بار ے میں ان کے حقیقی والد ایم امجد خان نے مطالبہ کیا ہے کہ بچوں کو ان کے حوالے کیا جائے۔ امجد خان کے مطابق ان کی ڈاکٹر عافیہ صدیقی سے اگست 2002ء میں علیحدگی ہوگئی تھی۔ وہ اپنے بچوں کے بار ے میں بہت فکر مند ہیں۔ اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے دعویٰ کیا کہ اکتوبر 2002ء میں میرا اور ڈاکٹر عافیہ صدیقی کا معاہدہ ہوا جس میں یہ طے پایا کہ تینوں بچے احمد‘ مریم اور سلیمان عافیہ صدیقی کی تحویل میں رہیں گے۔ مجھے بچوں سے ملاقات کی اجازت ہوگی۔ ڈاکٹر عافیہ صدیقی نے اس معاہدہ کی خلاف ورزی کی۔ مجھے بچوں سے ملنے نہیں دیا گیا میرے دو بچے امریکی شہری ہیں۔ انہوں نے کہا میرے بیٹے سلیمان کے بارے میں بتایاگیا کہ وہ حراست میں ہلاک ہوگیا۔ ا مجد خان نے کہا میں اپیل کرتا ہوں کہ مجھے میرے بچوں کے بارے میں بتایا جائے۔ میں اپنے دونوں بچوں کے بارے میں فکر مند ہوں۔ انہوں نے کہا کہ احمد کو عافیہ صدیقی کے خاندان کے حوالے کیا گیا جسے کراچی لایا گیا ہے۔ مجھے بچے سے نہ بات کرنے دی جا رہی ہے نہ ملنے دیا جا رہا ہے۔ مجھے ان کے گھر کے گیٹ سے واپس کردیا گیا ۔ اس سلسلہ میں عافیہ صدیقی کی بہن فوزیہ صدیقی سے رابطہ کی بار بار کوشش کی گئی مگر وہ دستیاب نہیں تھیں۔