کراچی: فائرنگ، دستی بم حملے میں 3 افراد ہلاک، 6 زخمی

کراچی: فائرنگ، دستی بم حملے میں 3 افراد ہلاک، 6 زخمی

کراچی (کرائم رپورٹر) کراچی میں فائرنگ اور دستی بم کا دھماکہ، تین افراد ہلاک اور دو بچوں اور شادی شدہ عورت سمیت چھ افراد زخمی ہوگئے۔ نپیئر کے علاقے لی مارکیٹ میں کھجور بازار کے نزدیک نامعلوم افراد نے 25 سالہ نوجوان کو سر میں دو گولیاں مار کر ہلاک کردیا اور فرار ہوگئے۔ ادھر نارتھ کراچی میں سلیم سینٹر کے قریب کچرا کنڈی سے 30 سالہ نوجوان کی بوری بند لاش ملی جسے تشدد کر کے ہلاک کیا گیا، اسکی شناخت نہیں ہوسکی۔ اسکے علاوہ منگھوپیر حب ڈیم کے علاقے میں نورانی ہوٹل کے نزدیک مسلح افراد نے ایک شخص 36 سالہ غلام شبیر کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا جبکہ مچھر کالونی میں بسم اللہ چوک کے نزدیک موٹر سائیکل سوار ملزمان نے کریانہ کی دکان پر دستی بم سے حملہ کیا جس کے دھماکے سے دو بچوں سمیت تین افراد زخمی ہوگئے اور علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ دریں اثنا بغدادی میں شادی شدہ عورت 35 سالہ عنبرین زوجہ دل مراد نامعلوم سمت سے آنے والی گولی لگنے سے زخمی ہوگئی۔ ملیر ہالٹ کے علاقے میں مسلح افراد کی فائرنگ سے 18 سالہ فاروق ولد طارق زخمی ہوگیا اور کلفٹن کے علاقے نیلم کالونی میں فائرنگ سے 28 سالہ راجہ اکمل ولد راجہ رفیق زخمی ہوگیا۔ مزید برآں منگل کی شب یو پی موڑ پر فائرنگ سے ایک شخص 30 سالہ آصف ولد اکرم زخمی ہو گیا جبکہ جیل چورنگی پر بھی فائرنگ کر کے ایک شخص کو زخمی کر دیا گیا۔ دریں اثنا رینجرز کے ٹارگیٹڈ آپریشن اور پولیس کے چھاپوں کا سلسلہ جاری رہا۔ 119 جرام پیشہ افراد ملزمان کو گرفتار اور بھاری اسلحہ برآمد کرلیا۔ گرفتار شدگان میں ٹارگٹ کلر‘ مفرور و اشتہاری ملزم اور دس ڈاکو بھی شامل ہیں۔ لائنز ایریا سے ایک ٹارگٹ کلر جنید ولد اشرف کو گرفتار کرکے ایک پستول برآمد کیا گیا۔ پولیس کے مطابق ملزم جنید پولیس اہلکار اکرم بیگ کے قتل میں بھی ملوث ہے۔