کراچی: سینئر سول جج پر فائرنگ، بچ گئے، وکلاء کا عدالتی بائیکاٹ

کراچی (آن لائن) کراچی ملیر الفلاح تھانے کی حدود میں سینئر سول جج سکندر حمید نامعلوم افراد کی فائرنگ سے بال بال بچ گئے۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کے روز سینئر سول جج سکندر حمید اپنی رہائش گاہ سے عدالت کی طرف روانہ تھے کہ راستے میں ڈکیتی واردات ہو رہی تھی جس پر سکندر حمید کے گارڈ نے ڈاکوئوں پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک ملزم زخمی ہو گیا جبکہ ڈاکوئوں نے جوابی فائرنگ کی ایک گولی سکندر حمید کی گاڑی پر بھی لگی لیکن وہ مکمل طور پر محفوظ رہے ۔ ایس ایس پی کورنگی ڈویژن نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ سینئر سول جج کی گاڑی پر فائرنگ ہوئی تاہم سکندر حمید بالکل محفوظ رہے ہیں جبکہ ان کے گارڈ کی فائرنگ سے ایک ڈاکو زخمی ہوا ہے جبکہ تینوں ملزمان موٹر سائیکل موقع پر چھوڑ کر فرار ہو گئے ہیں۔جج پر حملے کے خلاف وکلاء نے احتجاجاً ہڑتال کی اور عدالتی بائیکاٹ کیا۔ دوسری جانب جہانگیرآباد میں رضویہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے دو ٹارگٹ کلرز آصف عرف ناصر بنگش اور اطہر حسین کو گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزمان 10 سے زائد افراد کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث تھے اور ملزمان کا تعلق سیاسی جماعت سے ہے اور ملزمان سے 2 ٹی ٹی پستول سمیت اسلحہ بھی برآمد کیا گیا ہے۔