وزیرستان،فاٹا کے اچھے برے لوگ آنے سے کراچی میں دہشت گردی کو عروج ملا وکلا کو اسلحہ لائسنس دینگے:قائم علی شاہ

وزیرستان،فاٹا کے اچھے برے لوگ آنے سے کراچی میں دہشت گردی کو عروج ملا وکلا کو اسلحہ لائسنس دینگے:قائم علی شاہ

کراچی (این این آئی) وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت، اداروں اور ملک دونوں کے استحکام کیلئے ضروری ہے۔ وکلا برادری نے ملک میں قانون اور جمہوریت کی آزادی کیلئے بھرپور کردار ادا کیا ہے، وکلا کو انکی ضرورت کے مطابق تحفظ کیلئے مزید اسلحہ لائسنس بھی جاری کئے جائیں گے۔ دہشت گردی کی وجہ سے سوات ، وزیرستان اور فاٹا سے آنیوالے افراد پر کچھ پابندیاں لگانے کی کوشش کی تھی لیکن وہ لگ نہیں سکی اور ہمیں تنقید کا نشانہ بنایا گیا جس کی وجہ سے و زیرستان اور فاٹا سے اچھے اور برے لوگ کراچی آگئے جس کے نتیجے میں کراچی میں دہشت گردی کو عروج ملا۔وہ ہفتے کو سٹی کورٹ میں کراچی بار ایسوسی ایشن کی تقریب حلف برداری سے خطاب کر رہے تھے ۔ تقریب میں وزیر اعلیٰ سندھ نے کراچی بار کیلئے ایک کروڑ روپے گرانٹ کا بھی اعلان کیا۔انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں دہشت گردی نائن الیون کے بعد شروع ہوئی کیونکہ آمر حکمران نے بیرونی طاقتوں کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے۔ اگر اسوقت حکومت پاکستان کوئی اقدام کرتی تو آج ملک میں دہشت گردی عروج پر نہ ہوتی ۔ انہوں نے کہا جمہوریت سے ہی ملک اور عوام کو آزادی ملتی ہے لیکن ایک گروپ ایسا بھی ہے جو جمہوریت کے بجائے مارشل لا کی طرف دیکھتا ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ وکلا کے تمام مطالبات پورے کئے جائیں گے اور اے ٹی سی عدالتوں سمیت دیگر عدالتوں میں ریٹائرڈ ججوں کی جگہ نوجوان وکلا کو ترجیح دی جائیگی اور انکی تعیناتی دیگر عدالتوں کی علاوہ انکرچمنٹ ٹربیونل میں بھی کی جائیگی۔