قیام امن سے کراچی کی رونقیں بحال ہوں گی، ناصر شاہ

قیام امن سے کراچی کی رونقیں بحال ہوں گی، ناصر شاہ

کراچی(خصوصی رپورٹر)صوبائی وزیر اطلاعات و ٹرانسپورٹ حکومت سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں امن وامان کی بہتر صورت ہونے کے بعد تقریبات کی رونق بڑھ گئی ہے ۔پاک افواج ، رینجرز ، انتظامیہ نے امن و امان قائم کیا جس کے باعث بین الاقومی سطح پر بڑے پروگرام منعقد ہورہے ہیں ۔ عالمی سطح کی شخصیا ت کراچی آرہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی انٹرنیشنل بک فیئر کی افتتاحی تقریب میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے اپنے خطاب میں کیا جس کا اہتمام ایکسپو سینٹر میں کیا گیا تھا۔ کراچی انٹرنیشنل بک فیئر 11 دسمبر تک جاری رہے گا۔ تقریب سے ممتاز اور نامور دانشور ستیہ پال آنند، جاوید جبار ،محمود شام ، قاضی اسد عابد، پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلز ایسوسی ایشن کے عزیز خالد، کنوینر آرگنائزنگ کمیٹی ایس مرزا جمیل نے خطاب کیا۔ صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ کہا کہ کراچی انٹرنیشنل بک فیئر کا انعقاد کرکے عزیز خالد ، منتظمین اور اسپانسرز نے بڑی رونق بڑھائی ہے۔ فیسٹیول میں ہزاروں کی تعداد میں طلبا او ربچے شریک ہورہے ہیں کتابوںکی نمائش بہت معلوماتی ہے۔ اس سلسلے میں سندھ حکومت آپ کے شانہ بشانہ ہے۔ ناصر حسین شاہ نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ سندھ حکومت کی جانب سے لائبریریوں کو اپ ڈیٹ کیا جارہا ہے۔ اس سلسلے میں حکومت سنجیدہ ہے۔ جبکہ سٹی سروس اس ماہ شروع ہوگی۔ عزیز خالد چیئرمین پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن نے کہا کہ ہمارا یہ 13واں کتب میلہ ہے۔ 2018 میں یہ فیسٹیول 21سے 25 دسمبر تک جاری رہے گا۔ بعد ازاں پاکستان پبلشرز اینڈ بک سیلرز ایسوسی ایشن کی جانب سے جن شخصیات کو اعتراف خدمات ایوارڈ دیئے گئے۔ ان میں اردو زبان سے وابستہ خدمات پر ستیہ پال آنند، ممتاز مصنفہ اور صحافی زاہدہ حنا ،ماہر سیاسیات ( سندھی لینگویج اتھارٹی) ڈاکٹر فہمیدہ حسن کفایت اکیڈمی کے محمد سعیدا ور ویلکم بک پورٹ کے سید اصغر زیدی کو صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ کے ہاتھوں سے پیش کئے گئے جب کہ ٹرافی صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ کو اویس مرزا جمیل نے پیش کی اور اجرک پہنائی۔ علاوہ ازیں تمام مقررین کو گلدستے پیش کئے گئے۔تیر ہواں ، کراچی بین الاقوامی کتب میلہ پاکستان کا سب سے بڑا کتب میلہ ہے۔ جس میں330اسٹالز لگائے گئے ہیں، اس کتب میلہ میں ایران، انڈیا، ترکی، سنگاپور ،چین ، ملائیشیا ، برطنیہ اور متحدہ عرب امارات کے پبلیشرز سمیت دیگر ممالک کے بین الاقوامی شہرت یافتہ بک پبلیشرز اشاعت شدہ مواد کی نمائش کتب میلے میںکر رہے ہیں۔ اس نمائش میں آئے ہوئے ادیب ، شاعر، سماجی اور سیاسی شخصیات نے اس کتب میلہ کو کراچی شہر کے لیے خوش اائند قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی نمائش کراچی کے امیج کو بہتر کرنے میں بہت معاون ثابت ہوگا۔ کتب میلہ میں متعدد اسکولز کے بچوں نے بھی شرکت کی اور اپنی پسند کی کتب کا مطالعہ بھی کیا اور خرید کی بھی لے گئے۔ اس میلہ میں اردو، سندھی ، فارسی، پنجابی ، گجراتی سمیت ملک بھر میں بولی جانے والی زبانوں کے علاوہ انگریزی اور دیگر زبانوں کی کتابوں اور رسائل میں عوامی دلچسپی دیکھنے میں آئی۔کتب میلے میں سب سے زیادہ ویلکم بک پورٹ اور چلڈرن پبلیشرزکے اسٹالوں پر طلبہ و طالبات اور والدین کا رش دیکھنے میں آیا طلبا و طالبات نے ان اسٹالوں میں درسی کتب کے علاوہ غیر تدریسی دلچسپی کی کتب خریدیں امن وا مان کی بہتر صورت حال کے پیش نظر شہر کی رو نق کو کتب میلے نے چا ر چا ند لگا دیئے ہیں۔ تقریب میں موجو د مقررین میں مشہور ادیب و صحافی محمو د شام، قاضی اسد عابد،اویس مرزا جمیل شامل تھے۔تقریب میںکالم نگار زاہد حنا، ماہر تعلیم انوار احمد زئی، منصوب حسین صدیقی ، مشہور و معروف شاعر سحر انصاری سمیت دیگر ادیب ، شاعر ، مصنفین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ 

انٹرنیشنل بک فیئر