کراچی: ٹارگٹ کلنگ جاری‘ مزید 9 جاں بحق‘ لیاری میں فائرنگ‘ بم حملے‘ 2 ٹریلر نذر آتش

کراچی: ٹارگٹ کلنگ جاری‘ مزید 9 جاں بحق‘ لیاری میں فائرنگ‘ بم حملے‘ 2 ٹریلر نذر آتش

کراچی(آن لائن+ نوائے وقت نیوز) کراچی میں ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ جاری ،مزید9افراد جاں بحق ہوگئے لیاری میں مشتعل افراد نے 3ٹریلر نذر آتش کردئیے ۔تفصیلات کے مطابق لیاری میں گولیوں کی گھن گرج نہ رک سکی۔ پھول پتی لین ، ہنگورآباد اور رحیم آباد میں فائرنگ کے ساتھ راکٹ حملے بھی جاری رہے۔فائرنگ سے ایک شخص جان سے گیا۔گارڈن عثمان آباد میں بھی فائرنگ سے ایک شخص کی جان لے لی گئی۔لی مارکیٹ اور سرجانی ٹاو¿ن سے دو لاشیں ملی ہیں۔ جبکہ ہائیکورٹ کے قریب بورڈ آف ریونیو کی بلڈنگ سے نائب قاصد خلیل کی لاش ملی ہے اورنگی ٹاو¿ن ڈبہ موڑ کے قریب بھی فائرنگ سے ایک شخص مارا گیا۔پیرآباد پولیس کا مبینہ بھتہ خوروں سے مقابلہ ہوا جس میں فائرنگ کے تبادلے میں دو مبینہ بھتہ خور مارے گئے اورنگی ٹاون ایم پی آر کالونی میں سینما کے قریب ملزمان نے کریکر حملہ کیا جس سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔مچھر کالونی میں پولیس کی بھاری نفری نے سرچ آپریشن اور گھر گھر تلاشیکے دوران پچیس افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔اس دوران مسروقہ گاڑی اور اسلحہ بھی ملا ہے۔ ڈیفنس کے علاقے میں خیابان محافظ پر گاڑی میں سوار افراد ایک شخص کی لاش پھینک کر فرار ہوگئے۔ دوسری جانب لیاری کے رہائشیوں نے ٹارگٹ کلنگ اور بد امنی کیخلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا جس کے باعث ماڑی پور روڈ پر ٹریفک معطل ہوگئی جس کے نتیجہ میں شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔مشتعل مظاہرین نے گاڑیوں پر پتھراﺅ کیا جبکہ 3ٹریلروں کو آگ لگادی، مظاہرین پولیس کی موجودگی میں گاڑیوں میں لوٹ مار کرتے رہے۔ دریں اثنا لیاری میں بہار کالونی میں پولیس اورجرائم پیشہ عناصر کے درمیان فائرنگ کا شدید تبادلہ ہوا، گولیاں لگنے سے ڈی ایس پی شکیل سمیت 2 پولیس اہلکار زخمی ہو گئے۔ اس دوران جرائم پیشہ عناصر نے دستی بموں سے بھی حملے کئے۔ ذرائع کے مطابق مقابلہ کے دوران پولیس، رینجرز اور ایف سی کی مزید نفری کو طلب کرلیا گیا۔لیاری میں لوٹ مار کی کوشش ناکام بنانے کے دوران بس کنڈیکٹر کو گولیاں لگنے سے جاں بحق ہوگیا۔ ایس ایس پی کے مطابق مورچے ختم ہونے تک کارروائی جاری رہیگی اور یہ آپریشن3روز تک جاری رہیگا۔