قومی مجرم قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکتا ، کامران مائیکل

قومی مجرم قانون کے شکنجے سے نہیں بچ سکتا ، کامران مائیکل

کراچی(کامرس رپورٹر)وفاقی وزیر برائے پورٹس اینڈ شپنگ سینیٹر کامران مائیکل نے کہا ہے کہ کوئی قومی مجرم قانون کے شکنجے سے نہیں چھوٹ سکتا،عوام افواہوں پرہرگزکان نہ دھریں۔جو معاملہ عدالت میں زیرسماعت ہواس پرسوچے سمجھے بغیرتبصرہ نہیںکیاجاتا۔اپوزیشن والے حساس ایشوپرپوائنٹ سکورنگ سے گریز کیا کریں ،ان کارویہ انتہائی غیرمہذب اورغیرسنجیدہ ہے۔آج پاکستان میں کسی فردواحدکاراج نہیں بلکہ آئین اورقانون کی حکمرانی ہے۔ نظریہ ضرورت کودفن ہوئے کئی برس بیت گئے ،اب آئین اورقانون کے دائرہ سے باہرکچھ نہیں ہوگا ۔ہمارا ملک کسی ماورائے آئین اقدام کامتحمل نہیںہوسکتا،پاکستان کاکوئی ادارہ کسی فردواحد کیلئے اپنا وقارہرگز داﺅپر نہیں لگائے گا ۔اپنے ایک بیان میں کامران مائیکل نے مزید کہا کہ یہ بات طے ہے جھوٹ کی بنیادپرکسی شخص کو دنیا کی کسی عدالت سے ریلیف نہیںملتا ۔ وزیراعظم میاں نوازشریف کڑے احتساب اورشفافیت کے حامی ہیں جبکہ انہیں انتقام اور ابہام سے شدیدنفرت ہے ۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کسی بدعنوان اورملک دشمن شخص کے ساتھ ڈیل کرنے یااسے ڈھیل دینے کاتصور بھی نہیں کرسکتی ۔ سیاسی ومعاشی استحکام کیلئے پائیدار امن کاقیام اورانصاف کی بروقت فراہمی ناگزیر ہے۔انہوں نے کہا کہ کسی کے بنیاد ی حقوق غصب کرکے اس سے فرائض کی بجاآوری کی امید رکھنا جائز نہیں۔انہوں نے کہا کہ معاشرت اور معیشت کی مضبوطی کیلئے اداروں کو آئین کی مقررہ حدود کے اندراپنااپنا فعال کرداراداکرنے کی ضرورت ہے۔ایٹمی پاکستان کواقتصادی اورمعاشی طاقت بنانے کیلئے برآمدات بڑھاناہوں گی ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم یوتھ بزنس لون پروگرام معاشی استحکام کا روڈمیپ ہے۔