ویلیو ایڈڈ سمیت کوئی نیا ٹیکس قبول نہیں: کراچی کے تاجروں کا اعلان

کراچی (آن لائن) کراچی کے تاجروں نے توانائی کے نرخوں میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے تک ویلیو ایڈڈ ٹیکس سمیت کوئی بھی نیا ٹیکس قبول نہ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجلی، تیل اور گیس کی قیمتیں ایک سال کےلئے منجمد کی جائیں۔ وزیراعلیٰ سندھ وعدے کے مطابق تجارتی مراکز میں سکیورٹی کے انتظامات کریں۔ KESC کی پرائیویٹ انتظامیہ کو کارکردگی میں بہتری کےلئے ڈیڈلائن دی جائے اور ناکامی کی صورت میں معاہدہ ختم کر کے انتظام مقامی کمپنی کو سونپ دیا جائے، ویلیو ایڈڈ ٹیکس (VAT) کا نفاذ ملک میں سیاسی، معاشی اور توانائی کے بحران کے خاتمے سے مشروط کیا جائے۔ حکومت کی ٹیکس پالیسی مقامی معاشی حالات کے منافی اور آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن کے مطابق ہے۔ تاجروں پر ٹیکس سروے ٹیموں کو مسلط کرنے کی کوشش کی گئی تو مارکیٹوں کو ٹیکس عملے کےلئے نوگو ایریا بنا دیں گے، کاروبار بند کر کے سڑکیں بلاک کر دیں گے اور حکومت کے خلفا بھرپور تحریک چلائی جائےگی۔ گذشتہ روز آرام باغ فرنیچر مارکیٹ میں منعقدہ تاجر کانفرنس میں 300 سے زائد مارکیٹوں کے نمائندوں نے کہا کہ علامت قرار دیتے ہوئے کہا کہ کاروباری طبقے کے بنیادی مسائل اور مشکلات کا خاتمہ کئے بغیر حکومت کے مالی وسائل اور محصولات میں اضافے کی امید نہیں کی جاسکتی جبکہ مخدوش سیاسی و معاشی حالات میں دنیا کا کوئی بھی ٹیکس سسٹم کامیابی سے ہمکنار نہیں ہو سکتا۔