الطاف کا بیان : جماعت اسلامی کی مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع‘ تحریک انصاف آج کرائے گی

الطاف کا بیان : جماعت اسلامی کی مذمتی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع‘ تحریک انصاف آج کرائے گی

لاہور + کراچی + اسلام آباد (خصوصی نامہ نگار + آن لائن + آئی این پی) ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی جانب سے ملک اور قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف تقاریر کے خلاف جماعت اسلامی نے پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی۔ جماعت کے پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر کی جانب سے جمع کرائی جانےوالی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ ”یہ ایوان الطاف حسین کی ملک اور قومی سلامتی کے اداروں کے خلاف غیر ذمہ دارانہ رویہ اور ملک دشمنی پر مبنی تقاریر اور بیانات کی شدید مذمت کرتا ہے اور وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ الطاف حسین کی ملک دشمن اور فوج دشمن تقاریر کا نوٹس لیتے ہوئے جہاں ان کو براہ راست نشر کرنے پر پابندی عائد کرے وہیں پر ایم کیو ایم کی فسطائیت کی روک تھام کے لیے اس پر پابندی لگائے، نیز الطاف حسین کو برطانیہ سے واپس پاکستان لا کر آٹیکل 6کے تحت مقدمہ چلایا جائے“۔ علاوہ ازیں میڈیا کو جاری کردہ بیان میں ڈاکٹر سید وسیم اخترنے کہاکہ ایم کیو ایم ایک فاشسٹ تنظیم ہے جس نے گزشتہ تین دہائیوں سے کراچی شہر کے امن وامان کوتباہ وبرباد کرکے رکھ دیا ہے۔ بھتہ خوری، بوری بند لاشوں اور ٹارگٹ کلرز ایم کیو ایم کی صفوں میں چھپے بیٹھے ہیں۔ دریں اثنا اپوزےشن لےڈر پنجاب اسمبلی مےاں محمود الرشےد آج (سوموار) اےم کےو اےم کے قائد کے خلاف پنجاب اسمبلی مےں مذمتی قرارداد جمع کرائےں گے، تحریک انصاف کے مےاں محمودالرشےد نے کہا ہے کہ پنجاب مےں ہونےوالی بجلی کی بدترےن لوڈشےڈنگ پر پنجاب کے حکمرانوں کی خاموشی کسی جرم سے کم نہےں‘ مسلم لیگ (ن) اقتدار مےں رہنے کا اخلاقی جواز کھو چکی ہے۔ مےاں محمودالرشےد نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑنے والی افواج پاکستان کو آج پاکستانی عوام کی مکمل سپورٹ کی ضرورت ہے۔ دریں اثنا تحریک انصاف نے الطاف حسین کی اشتعال انگیز تقریر پر سندھ اسمبلی میں قرارداد لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اجلاس میں الطاف حسین کے بیان کی شدید مذمت کی گئی اور فیصلہ کیا گیا کہ پیر کو سندھ اسمبلی کے اجلاس میں الطاف حسین کی اشتعال انگیز تقریر کے خلاف قرارداد پیش کی جائے گی۔ تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی ثمر علی خان نے الطاف حسین کے خلاف سندھ اسمبلی میں قرارداد پیش کرنے کے فیصلے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ قرارداد کی حمایت کے لیے دیگر سیاسی جماعتوں کے ساتھ رابطے کیے جائیںگے۔ دریں اثنا ایوان بالا کا ہنگامہ خیز اجلاس(آج) پیر کو پارلیمنٹ ہاوس میں ہو گا، الطاف حسین کے خلاف قرارداد پیش ہونے کا امکان ہے۔ اجلاس پیر کو چیئر مین سینٹ رضا ربانی کی زیر صدارت شام چار بجے ہو گا، اجلاس سے قبل ہاوس بزنس ایڈوائزی کمیٹی کا اجلاس ہو گا جس میں حالیہ سیشن کے حوالے سے ایجنڈا طے کیا جائے گا ۔
سینٹ اجلاس آج