ڈرون حملے، ٹارگٹ کلنگ، مہنگائی، پاکستان کیخلاف سازشیں عروج پر ہیں: فضل الرحمن

ڈرون حملے، ٹارگٹ کلنگ، مہنگائی، پاکستان کیخلاف سازشیں عروج پر ہیں: فضل الرحمن

کراچی+ لاہور (خصوصی نامہ نگار+ ایجنسیاں) جمعیت علماءاسلام کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ پورا ملک زخمی ہے، ایک طرف کراچی اور کوئٹہ میں ٹارگٹ کلنگ جاری ہے۔ دوسری طرف ڈرون حملے جاری ہیں، تیسری طرف عوام پر مہنگائی کے ڈرون حملے کئے جا رہے ہیں، پاکستان کیخلاف عالمی سازشیں عروج پر پہنچ گئیں، اکتوبر میں سکھر میں ہونیوالی اسلام زندہ باد کانفرنس سندھ میں سیاست کا رُخ بدل دے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی میں مجلس عاملہ سے خطاب اور لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ قبل ازیں کراچی میں مجلس عاملہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ جمعیت علماءاسلام ملک کو سیکولر بنانے کے راستے کی سب سے بڑی رکاوٹ ہے اگر جمعیت علماءاسلام پارلیمنٹ میں نہ ہوتی تو آئین سے مذہب کا نام، اسلامی جمہوریہ پاکستان سے اسلامی کا لفظ، پارلیمنٹ کیلئے شوریٰ کی اصطلاح اور دیگر اسلامی شقوں کو نکال کر آئین کو سیکولر بنا دیا گیا ہوتا۔ اسلامیان پاکستان کی نمائندگی کرنے والے ایسے لوگ بھی پارلیمنٹ میں موجود ہیں جنہوں نے یہ کہاکہ اگر ہم جنس پرستی کو سوسائٹی قبول کر لے تو اُسے قانونی تحفظ ملنا چاہئے ایسے لوگوں کا مقابلہ پارلیمنٹ کے اندر جمعیت علماءاسلام کر رہی ہے۔ پوری دنیا کو سیکولر بنانا امریکی ایجنڈا ہے اور این جی اوز اس ایجنڈا کو عملی جامہ پہنانے کے لئے سرگرم عمل ہیں۔ انہوں نے کہاکہ 14اکتوبر کو سکھر میں منعقد ہونے والی اسلام زندہ باد کانفرنس سندھ کی سیاست کا رُخ تبدیل کر دیگی اور اہلیان سندھ ایک مرتبہ پھر اپنی قوت ایمانی کا اظہار کرکے یہ ثابت کرینگی کہ سندھ باب الاسلام ہے۔