کراچی : فائرنگ سے پیپلز پارٹی کے دو کارکن ہلاک‘ اے این پی کا شہر میں پارٹی دفاتر بند کرنے کا فیصلہ

کراچی (ریڈیو نیوز/ مانیٹرنگ ڈیسک) کراچی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے پیپلزپارٹی کے دو کارکن جاں بحق ہو گئے۔ اے این پی نے کراچی میں موجودہ صورتحال کے پیش نظر پارٹی وارڈز اور یونٹس بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے اورنگی ٹائون سیکٹر 11میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے گھر کے باہر بیٹھے دو افراد ندیم اور پرویز عالم کو ہلاک کر دیا۔ دونوں افراد کی نعشوں کو ضروری کارروائی کے بعد ورثاء کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ ادھر عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر شاہی سید نے کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایاکہ اے این پی نے موجودہ صورتحال کے پیش نظر تمام وارڈز اور یونٹس سے اپنے دفاتر بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے اس کے علاوہ صوبائی اور ضلعی دفاتر بدستور کام کرتے رہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت پندرہ دنوں میں کراچی کو ہر قسم کے اسلحہ سے پاک کرے تاکہ نہ اسلحہ رہے اور نہ خون خرابہ ہو۔ انہوںنے کہاکہ کراچی سے ہر قسم کا قانونی اور غیر قانونی اسلحہ تحویل میں لیا جائے۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں ایم کیو ایم ٗ پیپلزپارٹی اور اے این پی کے پاس بھاری مقدار میں اسلحہ موجود ہے اگر باقی جماعتیں اسلحہ حکومت کے پاس جمع کرائیں تو اے این پی بھی جمع کرا دے گی۔ انہوں نے کہاکہ 12مئی کو ہڑتال کرنے کا فیصلہ پختون ایکشن کمیٹی کا ہے اور وہ اپنے فیصلے پر قائم ہیں بارہ مئی کو ہڑتال کی جائے گی انہوں نے کہاکہ کراچی کے مسائل کے حل کیلئے آل پارٹیز کانفرنس بلائی جائے انہوں نے کہاکہ اے این پی کا پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ اے این پی وزیراعلیٰ سندھ کی سربراہی میں ہونیوالے متفقہ فیصلے پر قائم ہے۔ 12مئی کو ہڑتال کا فیصلہ برقرار رہے گا۔ آئی جیز اور سی سی پی او کی برطرفی سے غلط روایت قائم ہو گی۔