کراچی میں فائرنگ، خاتون، پولیس اہلکار، صحافی سمیت 12جاں بحق

کراچی میں فائرنگ، خاتون، پولیس اہلکار، صحافی سمیت 12جاں بحق

کراچی (کرائم رپورٹر/ نوائے وقت رپورٹ/ این این آئی) کراچی کے مختلف علاقوں میں فائرنگ اور پُرتشدد واقعات میں خاتون اور پولیس اہلکار سمیت 12افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے۔ پیر آباد کے علاقے میں نامعلوم موٹر سائیکل سوار ملزمان نے فائرنگ کرکے پولیس اہلکار کو ہلاک کر دیا جس کی شناخت ساجد کے نام سے ہو گئی۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق سرجانی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک سیاسی جماعت کا کارکن جاں بحق ہو گیا۔ واقعے کے بعد علاقے میں کاروبار و دکانیں بند کرا دی گئیں۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق اورنگی ٹاﺅن فرنٹیئر موڑ کے قریب نامعلوم ملزمان کی فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ہو گیا تاہم مقتول کی شناخت نہیں ہو سکی۔ اس سے قبل بلدیہ ٹاﺅن یوسف گوٹھ میں نامعلوم ملزمان کی فائرنگ سے 2افراد جاں بحق ایک زخمی ہوا۔ شہید ملت روڈ پر مسلح ملرمان نے فائرنگ کرکے نذر عباس نامی شخص کو ہلاک کر دیا، مقتول اپنی بیٹی کو سکول چھوڑنے جا رہا تھا، فائرنگ سے مقتول کی بیٹی بھی زخمی ہو گئی۔ منگھوپیر کے علاقے کنواری کالونی میں فائرنگ سے ایک شخص جاںبحق ہو گیا۔ اہلسنت و الجماعت کے ترجمان کے مطابق قتل کئے جانے والے شخص کا تعلق ان کی جماعت سے ہے۔ ایک اور واقعے میں شاہ فیصل کالونی میں پیش آیا جہاں دکان کے باہر کھڑے افراد پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کر دی جس سے ایک شخص جاں بحق ایک زخمی ہو گیا۔ دوسری جانب ریسکیو ذرائع کے مطابق سعید آباد سے ایک نامعلوم شخص کی لاش ملی ہے، گلستان جوہر بلاک 19سے خاتون کی لاش ملی جسے تشدد کا نشانہ بناکر قتل کیا گیا۔ قیوم آباد کے قریب فائرنگ سے مقامی اخبار کے کارکن مظفر زخمی ہو گئے۔ ٹارگٹڈ آپریشن کے دوران 36 مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا گیا۔ رواں سال کے پہلے 11ماہ کے دوران شہر قائد میں ٹارگٹ کلنگ، دہشت گردی اور فرقہ وارانہ واقعات میں سیاسی، سماجی، مذہبی، ڈاکٹرز اور وکلا سمیت 2000 سے زائد افراد اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ ستمبر، اکتوبر اور نومبر، تین ماہ میں 700سے زائد شہری موت کی وادی میں چلے گئے۔دریں اثناءلانڈھی مانسہرہ کالونی میں ٹیکسی پر فائرنگ کے نتیجے میں مہاجر قومی موومنٹ کے تین عہدیداروں کی ہلاکت کا مقدمہ متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن اور دو کارکنوں کے خلاف درج کر لیا گیا۔ اس سلسلے میں شرافی گوٹھ تھانے میں مہاجر قوومی موومنٹ کے کارکن عامر کی مدعیت میں متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن حماد صدیقی ا ور کارکنوں انیس ماما، منظور لمبا، انس اقبال اور دیگر کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی گئی۔