سعودی لیبر قوانین: 50فیصد تارکین وطن ابھی تک اپنے معاملات درست نہیں کرا سکے

صحافی  |  امیر محمد خان

جدہ ( امیر محمد خان سے ) سعودی عرب میں غیر قانونی تارکین وطن کو اپنے معاملات سعودی لیبر قوانین کے مطابق کرانے اور بغیر کسی سزا اور جرمانے کے غیرقانونی رہائش پذیر تارکین وطن کو خادم الحرمین الشریفین شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کی جانب سے دی جانے والی سہولت میں دس روز باقی رہ گئے مگر غیر قانونی تارکین وطن کی پچاس فیصد سے زائد تعداد ابھی تک اپنے معاملات درست نہیں کراسکی ہے ۔ یہاں رہائش تارکین وطن جنکی تعداد تقریبا ساٹھ لاکھ ہے اس میں ایک اندازے کے مطابق آدھی تعداد لیبر قوانین کے مطابق غیر قانونی ہے ، ان میں پاکستانی غیر قانونی افراد کی تعداد ایک اندازے کے مطابق تیس ہزار سے زائد ہے ، پاکستان کے حوالے سے یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستان واحد ملک ہے جن کا حکومتی سطح پر کوئی وفد تاحال سعودی حکومت سے مذاکرات کرنے کیلئے نہیںآیا جبکہ انڈونشیاء، فلپائین، ملائشیائ، سری لنکا، ہندوستان ، بنگلہ دیش کے وزراء اور اہم عہدیدار یہاں آکر سعودی حکومت سے رعائتی وقت میں اضافہ کی درخواست کررہے ہیں۔