ججز نظربندی کیس‘ پرویز مشرف کیخلاف تمام مقدمات کا ریکارڈ طلب کرلیا گیا

 اسلام آباد (وقائع نگار ) ججز نظربندی کیس میں صدر پرویز مشرف کی درخواست ضمانت پرسماعت کرتے ہوئے اسلام آباد ہائیکورٹ نے پر وےز مشرف کے خلاف قائم تمام مقدمات کا رےکارڈ پولےس سے طلب کرلیا ہے۔ پےر کے روز مقدمہ کی سماعت عدالت عالےہ کے جسٹس ریاض احمد خان اور جسٹس شوکت عزیز صدیقی پر مشتمل دورکنی بینچ نے کی۔ فاضل بنچ نے فریقین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے مشرف کے خلاف قائم مقدمات کا ریکارڈ طلب کرلیا کیس کی مزید سماعت 4 جون کو ہوگی۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے سابق صدر مشرف کی ضمانت کی درخواست مسترد کر دی تھی۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ ججز نظربندی کیس میں دہشت گردی کی دفعات کا اطلاق کسی صورت بھی نہیں ہوتا۔ پرویز مشرف آرمی چیف اور صدر پاکستان تھے۔ صدر پاکستان دہشت گرد نہیں ہوسکتے۔ مشرف کے خلاف ججوں کو نظربند یا حراست میں رکھنے کا کوئی ثبوت نہیں۔ درخواست میں وفاق اور مشرف کے خلاف درخواست گزار اسلم گھمن کو فریق بنایا گیا تھا۔
جج نظربندی کیس