قبائلی علاقوں میں امن مذاکرات کے ذریعے قائم کرینگے: نثار

قبائلی علاقوں میں امن مذاکرات کے ذریعے قائم کرینگے: نثار

 اسلام آباد (اے این این) وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ قبائلی علاقوں میں مذاکرات کے ذریعے امن قائم کیا جائے گا، طاقت کا استعمال آخری آپشن ہے، شرپسندوں کی کارروائیاں ناکام بنانے کیلئے قبائلی عمائدین کی مدد درکار ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے فاٹا سے تعلق رکھنے والے ارکان پارلیمنٹ کے وفد سے گفتگو میں کیا۔ چوہدری نثار نے ارکان پارلیمنٹ کو یقین دلایا کہ فاٹا میں قیام امن کیلئے قبائلی روایات کو بھی ملحوظ خاطر رکھا جائے گا مسلم لیگ (ن) کی حکومت فاٹا میں بات چیت کے ذریعے امن لانے کیلئے پرعزم ہے اور مذاکراتی عمل میں تمام سٹیک ہولڈرز کو شامل کیا جائے گا، تمام فریقین کو اعتماد میں لیا جائے گا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ قبائلی عمائدین اپنے منتخب نمائندوں کی مدد اور حمایت سے دہشت گردی کو شکست دینگے۔ ذرائع کے مطابق فاٹا کے ارکان پارلیمنٹ نے شمالی وزیرستان میں کرفیو کے نفاذ اور جاری آپریشن پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان کو یقین دلایا کہ وہ مذاکراتی عمل کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔
نثار