الیکشن عدلیہ کرائے یا انتظامیہ عمران کبھی خوش نہیں ہونگے بھارت مذاکرات کی پیشکش کو کمزوری نہ سمجھے : پرویز رشید

الیکشن عدلیہ کرائے یا انتظامیہ عمران کبھی خوش نہیں ہونگے بھارت مذاکرات کی پیشکش کو کمزوری نہ سمجھے : پرویز رشید

اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں+ نوائے وقت رپورٹ) وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ الیکشن عدلیہ کرائے یا انتظامیہ عمران خان کبھی خوش نہیں ہونگے، الیکشن کمیشن آزاد اور خودمختار ہے، بلدیاتی انتخابات وہی کرائے گا۔ عمران خان کی پریس کانفرنس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ جب عدلیہ انتخابات کراتی ہے تو عمران خان خوش نہیں ہوتے اور جب الیکشن کمیشن کی طرف سے انتظامیہ کو ملوث کیا جاتا ہے تو تب بھی وہ بالکل خوش نہیں ہوتے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کمشن آزاد اور خودمختار ہے اور بلوچستان میں بلدیاتی انتخابات کرا کر اس نے اس بات کا ثبوت دے دیا ہے جہا ں کسی قسم کی دھاندلی کی کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی اور تمام جماعتوں بشمول تحریک انصاف نے کوئی تحریری شکایت یا الزام عائد نہیں کیا۔ یہی الیکشن کمشن دیگر صوبوں میں بھی منصفانہ اور شفاف بلدیاتی انتخابات کرائے گا۔ انہوں نے پنجاب میں دھاندلی کے الزامات کو مسترد کر دیا۔ بعض میڈیا رپورٹس پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے پرویز رشید نے کہا کہ سابق صدر مشرف کو حکومت کسی قسم کا ریلیف دینے کا اختیار نہیں رکھتی کیونکہ ان کے خلاف آئین کے آرٹیکل 6 کے تحت غداری کا مقدمہ عدالت میں زیرسماعت ہے، ان کے بیرون ملک جانے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔ قبل ازیں ایک انٹرویو میں وزیر اطلاعات ونشریات نے کہا ہے کہ مذاکرات کی پیشکش کو کمزوری نہ سمجھا جائے، ہم کسی کے دباﺅ میں نہیں آئینگے اور بھارت بھی یہ جانتا ہے کسی کو طاقت کے زور سے دبایا نہیں جا سکتا، علاقائی امن و استحکام کیلئے مسئلہ کشمیر حل کرنا ہوگا۔ بھارت کی جانب سے مذاکراتی عمل کیلئے گرین سگنل ہو تو پاکستان وہاں نئی حکومت کے قیام سے قبل بھی پیشرفت کیلئے تیار ہے۔ انہوں نے کہا سرحدوں پر کشیدگی کے خاتمہ اور جنگ بندی کیلئے ڈی جی ایم اوز کا مذاکراتی عمل ان وسیع تر مذاکرات میں معاونت کا باعث بنے گا۔ باہمی تجارت اور دیگر معاملات کے ساتھ کشمیر اور پانی کا مسئلہ بھی بات چیت میں شامل ہوگا۔
پرویز رشید