بینظیر قتل کیس سے منسلک 5 پولیس افسروں اور ایک جج کو دھمکی آمیز ایس ایم ایس‘ تحقیقات شروع

راولپنڈی (آن لائن) سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹوکے قتل کیس میں مدعی انسپکٹرکاشف ریاض ، سابق سی پی او راولپنڈی سعود عزیز سمیت 5 پولیس افسران اور ایک جج کو دھمکی آمیز ایس ایم ایس کے بعد مختلف تھانوں میں روز نامچہ رپورٹ درج کرکے تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔ایس ایم ایس میں احرار الہندکا نام استعمال کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ  امیر صاحب نے آپ کے وارنٹ  پر دستخط کر دیئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق انسپکٹرکاشف ریاض، تفتیش سے جڑے رہنے والے اور برآمدگی کے گواہوں پولیس انسپکٹرالیاس، انسپکٹر اعجاز شاہ اور انسپکٹراظہر شاہ کو چند دن قبل نامعلوم افراد کے  دھمکی آمیز پیغامات موصول ہوئے، خفیہ ادارے نے مذکورہ پولیس افسران کی سکیورٹی سخت کرنے کی سفارش  کر دی۔  دھمکی آمیز پیغام میں سابق سی پی او راولپنڈی سعود عزیز،راولپنڈی میں تعینات رہنے والے ایک جج کا بھی نام شامل ہے۔ ذرائع  کے مطابق ابتدائی تحقیقات  میں  معلوم ہوا ہے کہ ایس ایم ایس کسی موبائل فون نمبر سے بھجوانے کے بجائے کمپیوٹر پر دستیاب فری ایس ایم ایس سروس مہیا کرنے والے ویب سائٹ سے بھجوائے گئے ہیں۔دوسری جانب مذکورہ پولیس افسران کی سکیورٹی  سخت کردی گئی ہے۔یاد رہے  مذکورہ افسران کوگذشتہ سال بھی ایسی ہی دھکمیاں ملی تھیں۔