کینیڈا لے جانے کیلئے دو بھائیوں نے بہنوں سے شادی کے جھوٹے سرٹیفکیٹ بنوالئے

راولپنڈی (اسرار احمد/ دی نیشن) جہلم میں دو پاکستانی نژاد کینیڈین بھائیوں نے باہر لے جانے کیلئے اپنی حقیقی بہنوں کے ساتھ شادی کا جھوٹا سرٹیفکیٹ بنوا لیا، ان میں سے ایک تو اپنے ساتھ لے جانے میں بھی کامیاب ہوگیا دوسرے بھائی کی یہ غیر قانونی اور غیر اسلامی کارروائی ڈی این اے ٹیسٹ اور جھوٹے سرٹیفکیٹ کے باعث پکڑی گئی اور وہ اسے ساتھ نہ لے جاسکا۔ جو شخص اپنے ساتھ اس نام نہاد بیوی کو لے جانے میں کامیاب ہوگیا اس نے یہ ڈرامہ رچایا کہ اسے اونٹاریو میں چار پانچ سال بعد جون 2010ء میں طلاق دیدی اور ایک پاکستانی لڑکی سے شادی کرلی۔ ایف آئی اے اس تمام کارروائی سے بے خبر رہی کیونکہ ان دو بھائیوں نے جعلی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بھی بنوالئے اور بے نظیر انٹرنیشنل ائرپورٹ کے ذریعے کینیڈا جانے میں کامیاب ہوگئے ۔ عزیز الرحمن، نورین عزیز کے شناختی کارڈ پاسپورٹ جہلم سے بنے تھے۔