اقبال اکیڈمی کیس: عدالت بل منظور کرانے کیلئے کوئی حکم نہیں دے سکتی: سپریم کورٹ

اقبال اکیڈمی کیس: عدالت بل منظور کرانے کیلئے کوئی حکم نہیں دے سکتی: سپریم کورٹ

 اسلام آباد( نمائندہ نوائے وقت)سپریم کورٹ نے لاہور میں تعمیر ہونے والی اقبال اکیڈمی سے متعلق کیس کی سماعت میں فریق وکیل کو ہدایت کی ہے کہ وہ عدالت کو بتائیں آئین کے آرٹیکل184/3کے تحت ان کا کون سا حق متاثر ہورہا ہے۔ جسٹس جواد ایس خواجہ کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی تواقبال اکیڈمی کے وکیل نے موقف اختےار کیا کہ منصوبے کی کیبنٹ ڈویژن نے منظوری دی تھی مگر حکومت کی جانب سے کسی ممبر اسمبلی نے بل پارلیمنٹ میں پیش نہیں کےا۔ جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہا جب اسمبلےاں تحلیل ہوتی ہیں تو زیر التواءتمام بل ختم ہوجاتے ہیں، حکومت کیبنٹ ڈویژن کے کسی حکم کو ختم بھی کرسکتی ہے یہ حکومت کی اپنی مرضی ہے عدالت بل پاس کرانے کیلئے کوئی حکم نہیں دے سکتی۔