مزید 5 وزارتوں کی صوبوں کو منتقلی سے 27 ہزار ملازمین متاثر ہونگے : سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی+ ثناءنیوز) سےنٹ کی قائمہ کمےٹی برائے کابےنہ سےکرٹرےٹ و بےن الصوبائی رابطہ کو اجلاس کی کارروائی کے دوران سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے آگاہ کےا ہے کہ 18 وےں ترمےم کے تحت دوسرے مرحلے مےں 30 مارچ کو مزےد 5 وفاقی وزارتوں کی منتقلی کے نتےجے مےں 27 ہزار ملازمےن متاثر ہوں گے۔ ان مےں وفاقی وزارت تعلےم کے ساڑھے 12 ہزار ملازمےن بھی شامل ہےں۔ ان ملازمےن کو وفاق مےں حاصل مراعات کی ادائےگی کو ےقےنی بنانے کے لےے پارلےمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے قرارداد کی منظوری حاصل کی جائے گی۔ قرارداد کا مسودہ تےار کر لےا گےا ہے۔ تےسرے مرحلے مےں ہر ماہ اےک وزارت صوبوں کو منتقل ہوگی اور ےہ عمل 30 جون 2011 ءتک مکمل کر لےا جائے گا۔ کمےٹی کا اجلاس چےئرمےن سےنےٹر شاہد حسن بگٹی کی صدارت مےں پارلےمنٹ ہاس مےں ہوا۔ قائمہ کمےٹی نے اجلاس مےں سےکرٹری کابےنہ ڈوےژن نرگس سےٹھی کی عدم شرکت پر برہمی کا اظہار کےا۔ احتجاجاً کابےنہ ڈوےژن سے متعلق اےجنڈہ آئٹمز کو موخر کر دےا گےا۔ متعلقہ حکام کو کمےٹی کی تشوےش سے سےکرٹری کابےنہ ڈوےژن کو آگاہ کرنے کی ہداےت کی گئی ہے۔ سےکرٹری اسٹےبلشمنٹ ڈوےژن نے کمےٹی کو بتاےا گزشتہ دو سالوں کے دوران گرےڈ 20 اور اس سے اوپر کے سکےلوں مےں 40 افسران کو کنٹرےکٹ پر بھرتی کےا گےا ہے۔ 2009ءمےں 31 اور 2010ءمےں 9 اعلیٰ افسران کو کنٹرےکٹ پر تعےنات کےا گےا۔ کمےٹی کو آگاہ کےا گےا کہ اب بھی ڈی جی اےف آئی اے سمےت 17 افسران کنٹرےکٹ پر تعےنات ہےں۔ انہوں نے بتایا وزےراعظم نے احکامات جاری کئے ہےں کہ کنٹرےکٹ پر افسران رکھے جائےں نہ کسی کی مدت ملازمت مےں توسےع دی جائے۔ کمےٹی نے کہا کہ وزےراعظم کے نوٹس مےں لائے بغےر تقررےاں اور توسےع کا سلسلہ جاری ہے جو فوری ختم کیا جائے۔