بھارتی امن وفد نے اسلام آباد میں کلدیپ نائر کی قیادت میں اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی اور مشاہد سید سے الگ الگ ملاقاتیں کی ہیں۔

ملاقاتوں میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں بہتری، ممبئی حملوں کے بعد کی صورتحال پرتبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر اسفند یار ولی نے سوات امن معاہدے کے حوالے سے وفد کو آگاہ کیا اور بتایا کہ اس سےعلاقے میں امن کے قیام کے حوالے سے مدد ملے گی۔ مشاہد حسین نے کہا کہ دونوں ممالک کے عوام امن پسند ہیں اور ہمارے لیے وقت ہے کہ اب تمام مسائل کو حل کرتے ہوئے اپنی آنے والی نسلوں کو امن کا تحفہ دیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بھارتی وفد کے سربراہ کلدیپ نائرنے کہا کہ بھارت کو پاکستان کے سوالوں کا جواب دینا چاہیے اور دونوں ممالک کو امن مذاکرات کا سلسلہ شروع کرنا چاہیے۔ ممبئی حملوں کے بعد دونوں ممالک کے میڈیا کا کردار منفی رہا ہے تاہم گزشتہ چند ہفتوں سے پاکستانی میڈیا کا کردارمثبت ہے۔ معروف بھارتی فلمساز مہیش بھٹ نے کہا کہ ہم نے محبت اور امن کا پہلا پودا لگایا ہے اب حکومتوں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس کو پروان چڑھائے۔