ویلیو ایڈڈ ٹیکس کے ذریعہ پرچون فروشوں کو ٹیکس نیٹ میں لایا جائے گا

اسلام آباد (عترت جعفری) ایف بی آر نے یکم جولائی سے ویلیو ایڈڈ ٹیکس نافذ کرنے کے لئے موجودہ قانون پارلیمنٹ میں جمع کرا رکھا ہے اس کی منظوری کی صورت میں ٹرن اوور ٹیکس کی سہولت ختم ہو جائے گی یا اس کی حد کو بہت محدود کر دی جائے گی اور چھوٹے بڑے تمام پرچون فروش ٹیکس نیٹ میں آ جائیں گے‘ ایف بی آر کو ایک عرصہ سے شکایت ہے کہ پرچون فروش ٹیکس ادا نہیں کرتے یا ان کی تعداد بہت کم ہے جو گوشوارے جمع کراتی ہے اور ریونیو میں حصہ دار بنتی ہے اس وقت کے نافذ قانون کے تحت 50 لاکھ روپے سے 2 کروڑ روپے ٹرن اوور تک پرچون فروش اپنی آمدن پر 0.75 فیصد یا ٹرن اوور کے 2 فیصد کے برابر ٹیکس ادا کرتے ہیں ویلیو ایڈیڈ ٹیکس اور جی ایس ٹی کے موجودہ نظام میں فرق یہی ہے کہ ویلیو ایڈیڈ ٹیکس پرچون کی سطح پر آئے گا جس کے ریٹ کا تعین ابھی ہونا ہے جبکہ ایف بی آر نے 16 فیصد کی تجویز دے رکھی ہے چیئرمین ایف بی آر حال ہی میں یہ کہہ چکے ہیں کہ اگر پارلیمنٹ نے ویلیو ایڈیڈ ٹیکس کے مسودہ کو منظور نہ کیا تو جی ایس ٹی کی تمام استثنیات ختم کر دی جائیں گی۔