افغانستان میں مفاہمت کیلئے طالبان سے ہر سطح پر رابطے کر رہے ہیں: پاکستان

اسلام آباد (ریڈیو نیوز/ آن لائن) پاکستان نے کہا ہے کہ افغانستان مےں مفاہمت کےلئے افغان حکومت کی مدد کر رہے ہےں اور افغان طالبان سے ہر سطح پر رابطے کی کوشش کی جارہی ہے، مسلح ڈرون طےارے چاہئےں، مشرقی سرحدوں سے فوج نہےں ہٹا سکتے، بھارت مےں رابرٹ گےٹس کا پاکستان مخالف بےان غےر سفارتی ہے، امرےکی ڈرون طےاروں کو گرانے کی صلاحےت رکھتے ہےں تاہم امرےکہ سے اُلجھنا نہےں چاہتے، برطانوی خبررساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے وزارت خارجہ کے ترجمان عبدالباسط نے کہا کہ ہم افغان طالبان سے تمام سطحوں پر رابطوں کےلئے کوشش کر رہے ہےں لےکن ابھی ےہ کہنا کہ ہماری کوششےں رنگ لائےں گی قبل از وقت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ےہ بہت اہم ہے کہ مفاہمت ہر سطح پر ہو اور اس کےلئے پاکستان افغان حکومت کو مدد فراہم کر رہاہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس بارے مےں مخصوص بحث مےں نہےں پڑنا چاہتے، ہماری کوشش ہے کہ ہم ان طالبان ےا طاقتوں کو اپنا ہمنوا بنائےں جو مفاہمت پر آمادہ ہےں، عبدالباسط نے طالبان کی اعلیٰ قےادت سے رابطوں پر سوال کا جواب دےتے ہوئے کہا کہ پاکستان تمام سطحوں پر رابطے کر رہا ہے تاہم اس بارے ہماری کامےابی الگ معاملہ ہے، ترجمان وزارت خارجہ نے کہا کہ ہمےں مسلح ڈرون طےارے چاہئےں جن مےں مےزائل فائر کرنے کی صلاحےت ہو۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم اپنے آپرےشنز مےں وسعت لاتے ہےں تو ہمےں مشرقی سرحد سے فوج ہٹانا پڑے گی جو ممکن نہےں ہے‘ امرےکہ دہشتگردی کے خلاف جنگ مےں پاکستان کے بقاےا فنڈز فوری طور پر فراہم کرے، بھارت مےں امرےکی وزےر دفاع کا بیان غےرسنجےدہ اور غےر سفارتی قسم کا ہے اور بھارت اےسے بےانات سے فائدہ اٹھا سکتا ہے۔ ترجمان نے کہاک ہآئی پی ایل میں پاکستانی کھلاڑیوں کی بولی نہ لگانے کے فیصلے کے پیچھے بیرونی ہاتھ اثرانداز ہوئے ہیں۔