ویلیو ایڈڈ ٹیکس کی بجائے اصلاح شدہ جنرل سیلز ٹیکس عائد کیا جائیگا: چیئرمین ایف بی آر

اسلام آباد (آن لائن) ایف بی آر کے چیئرمین سہیل احمد نے کہاہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ طے پاگیاہے کہ ویلیو ایڈڈ ٹیکس کے بجائے اب اصلاح شدہ جنرل سیلز ٹیکس عائد کیا جائےگا جس کے قانون کا مسودہ یکم اکتوبر سے قبل قومی اسمبلی میں پیش کردیا جائےگا۔ ایف بی آر کے چیئرمین سہیل احمد نے ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ آئی ایم ایف نے آئندہ بات چیت سے قبل خسارے والی کارپوریشنز کو منافع بخش بنانے اور بجلی کی نرخ بڑھانے کا مطالبہ کیا ان کا کہنا تھا کہ اصلاح شدہ جی ایس ٹی کےلئے اشیاءاور سہولیات پر رعایت ختم کرنے اور ہر سطح پر جی ایس ٹی عائد کرنے کےلئے تیاریاں کی جارہی ہیں نئے مسودے کے تحت جی ایس ٹی کی شر ح سولہ فیصد سے کم کرکے پندرہ فیصد کردی جائے گی تاہم اب یہ خدمات کے شعبے جن میں بنکنگ اور ٹیلی کمیونیکیشن نمایاں ہیں اور تمام درآمدی اشیاءپر بھی عائد کیا جائےگا سہیل احمد نے مزید کہاکہ اگر کامیاب اصلاحات کی گئیں تو پاکستان کا کیس آئی ایم ایف کے بورڈ کے سامنے دسمبر میں پیش ہوگا۔ دوسری جانب ایف بی آر کے ترجمان اسرار رﺅف نے بتایاکہ پارلیمنٹ سے منظوری کی صورت میں ایف بی آر جو اگلے مالی سال کےلئے پہلے سے ایڈجسٹ ایبل انکم ٹیکس وصول کرتاہے اس پر اضافی دس فیصد سرچارج کے ساتھ ایک سال کے شروع میں ادا کرنا ہوگا ان کا کہنا تھا کہ منظوری کی صورت میں تنخواہ دار طبقے کا اضافی ٹیکس ہر ماہ کٹے گا۔