عالمی برادری کشمیریوں کی نسل کشی رکوائے : پاکستان

عالمی برادری کشمیریوں کی نسل کشی رکوائے : پاکستان

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے داعش منظم صورت میں افغانستان کے اندر موجود ہے، پاکستان میں اس دہشت گرد تنظیم کا منظم وجود نہیں ہے۔ پاکستان جموں وکشمیر کے تنازعے سمیت تمام مسائل کے حل کیلئے بھارت کے ساتھ بامعنی ، نتیجہ خیز اور تعمیری مذاکرات کے لئے تیار ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں عوام کی طرف سے نام نہاد انتخابات کو یکسر مسترد کر کے اپنی مرضی واضح کر دی ہے۔ ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران نفیس زکریا نے کہا کہ سمجھوتہ ایکسپریس دہشتگردی کا معاملہ مختلف مواقع پر بھارتی قیادت سے اٹھایا۔ مقبوضہ کشمیر سے لیک شدہ ویڈیو بھارت کے کشمیریوں کو انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرنے کا ثبوت ہے۔ بھارت کل بھوشن یادیو کو سزا کے بعد تمام بات چیت کو روک رہا ہے۔ بھارت میں اپنی سزا مکمل کرنے والے پاکستانی قیدیوں کو روک لینا مایوس کن ہے۔ کل بھوشن یادیو بےشمار پاکستانیوں کے قتل کا ذمہ دار ہے۔بھارت کے ساتھ قیدیوں تک رسائی کا معاہدہ موجود ہے تاہم اس معاہدہ کی مخصوص شق کے تحت تخریب کاروں کا کیس ٹو کیس فیصلہ کیا جاتا ہے۔ پاکستان بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں مظالم کا معاملہ تمام فورمز پر اجاگر کرے گا۔ عالمی برادری سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کی نسل کشی رکوانے کامطالبہ کرتے ہیں۔بھارت قابض افواج کے ہاتھوں 8 جولائی کے بعد سے 2 سو کشمیری شہید ہوئے۔ 8 ہزار سے زائد. کشمیری ان مظالم کے نتیجہ میں زخمی ہوئے۔ بھارتی افواج جان بوجھ کر کشمیریوں کی بینائی ختم کر رہی ہیں۔ حالیہ واقعات بھارتی افواج کی کشمیری عوام کی بینائی ختم کرنے کی اجتماعی کوششوں کا نتیجہ ہے۔ جماعت الاحرار اور ٹی ٹی پی کی افغانستان میں خفیہ پناہ گاہیں ہیں ۔ وہ ان خفیہ پناہ گاہوں سے پاکستان کے خلاف کاروائیاں کرتی ہیں۔ امریکہ میں نئی انتظامیہ ہے جس کے ساتھ باہمی تعلقات کے تناظر میں مل کر کام کرنے کے خواہشمند ہیں۔ نئی امریکی انتظامیہ کا یہ پہلا اعلیٰ سطح کا دورہ تھا۔ امریکی قومی سلامتی کے مشیر میک ماسٹر کے دورہ پاکستان کے دوران ملاقاتوں میں زیادہ تر علاقائی سلامتی پر بات چیت ہوئی۔ اس بات پر غور کیا گیا کس طرح پاکستان اور امریکہ مل کر افغانستان میں قیام امن کی کوشش کر سکتے ہیں۔ ملاقاتوں میں مسئلہ کشمیر کو بھی اجاگر کیا گیا۔ ملاقاتوں کے دوران امریکی حکومت نے انسداد دہشت گردی میں پاکستان کی قربانیوں کا اعتراف کیا۔نئی امریکی انتظامیہ افغانستان میں اپنی پالیسی پر نظرثانی کر رہی ہے۔ شنگھائی تعاون تنظیم اجلاس کے حوالے سے ابھی کوئی چیز حتمی طور پر طے نہیں کی گئی۔ پکڑے جانے والے دہشت گردوں نے رضاکارانہ داعش کا نام استعمال کیا۔ لیفٹیننٹ کرنل (ر) حبیب ظاہر 6 اپریل سے لمبینی نیپال سے لاپتہ ہیں۔ ان کو جعلی ای میل کے ذریعہ پھنسایا گیا۔ معاملہ میں دشمن ایجنسیوں کے کردار کو نظر انداز نہیں کر سکتے۔ حبیب ظاہر کے لئے ٹکٹ بک کرنے، ان کے لئے کمرہ کرائے پر لینے اور ان کا استقبال کرنے والے بھارتی شہری نکلے ہیں۔ ماسکو میں مذاکرات افغانستان میں قیام امن کی خاطر تھے، ان مذاکرات میں افغانستان حکومت نے بھی حصہ لیا۔ آ ئی این پی کے مطابق ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کشمیری عوام کی تحریک آ زادی کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھیں گے، بھارت مقبوضہ کشمیر میں معصوم لوگوں کے خلاف اندھی طاقت استعمال کر کے اقوام متحدہ کے چارٹر کی خلاف ورزی کر رہا ہے، بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں طالب علموں اور نوجوانوں کے خلاف باقاعدہ جنگ شروع کر دی۔
دفتر خارجہ